راجن پور، زمیندار نے پانی کے مسئلے پر مقامی بستی کا راستہ بند کر دیا

راجن پور کے نواحی علاقے عمر کوٹ میں با اثر زمیندار نے پانی کا کھالہ مرمت کرنے کے معاملے پر 200 گھروں پر مشتمل بستی کا راستہ بند کر دیا جس کے باعث متاثرین سراپا احتجاج ہے۔

عمر کوٹ میں با اثر زمیندار عبداللہ کلیار نے 200 گھروں پر مشتمل بستی مرکھانی کا راستہ بند کر دیا جس کی وجہ سے عورتوں اور بچوں کو اسپتال لے جانا بھی ناممکن ہوگیا۔

متاثرین کے مطابق فصلیں سوکھ رہی ہیں جبکہ کھاد اور ڈیزل بھی نہیں لے جاسکتے اسلیے انصاف فراہم کیا جائے۔ بستی کے راستے کی بندش سے متعلق زمیندار عبداللہ کلیار نے کوئی مؤقف نہیں دیا۔

دوسری جانب پولیس کے مطابق معاملہ دو گروپوں عبداللہ کلیار اور سانول مرکھانی کا ہے معاملہ پانی کے کھالے کی مرمت سے شروع ہوا۔ ابتداء میں دونوں فریقین نے انفرادی طور پر پیسے جمع کرکے کھالے کی مرمت کا کام شروع کیا تو بعد میں عبداللہ نے کام روک دیا۔

عبداللہ کلیار نے تھانہ عمر کوٹ میں مورخہ 31 جولائی کو سانول مرکھانی گروپ کے خلاف کھالہ توڑنے کی درخواست دی اور اسی دن عبداللہ کلیار نے اپنے رقبہ سے مرکھانی گروپ کے رقبہ کی طرف جاتا ہوا راستہ توڑ کر بند کر دیا۔

پولیس نے دونوں فریقین کے خلاف ضابطہ فوجداری 107 کی کارروائی کی اور مجسٹریٹ صاحب کی عدالت میں پیش کیا گیا جو بعد ازاں ضمانت پر رہا ہوگئے۔

سانول مرکھانی گروپ نے بند راستہ کھولنے کی کوشش کی جس پر کلیار گروپ نے کورٹ کا اسٹے آرڈر دکھایا جس پر دونوں گروپ کے افراد کی آپس میں لڑائی ہوئی جس میں چند افراد معولی زخمی ہوئے۔ پولیس نے موقع پر پہنچ کر دونوں فریقین کے زخمی افراد کو میڈیکل ڈاکٹ جاری کیا۔ ڈاکٹ کا رزلٹ آنے پر مزید قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

مزید یہ کہ پولیس نے راستہ سے متعلق محکمہ ریونیو کو اسٹیٹس سے متعلق لیٹر لکھا ہے جس کا تاحال جواب موصول نہیں ہوا۔ لیٹر موصول ہونے پر مزید قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

water issue

LAND LORD

Umarkot

Tabool ads will show in this div