حکومت کا روٹی،نان کی پرانی قیمت بحال کرنے اور سبسڈی دینکا فیصلہ

حکومت نے روٹی کی بڑھتی قیمتوں میں اضافے کا نوٹس لیتے ہوئے روٹی اور نان کی پرانی قیمت بحال کرنے کا فیصلہ کیا ہے، جب کہ چھوٹے تندور مالکان کو گیس کی مد میں ایک ارب روپے سے زائد سبسڈی دے جائے گی۔

منگل کے روز ہونے والی اقتصادی رابطہ کمیٹی ( ای سی سی) کے اجلاس میں روٹی کی قیمتوں میں اضافے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے من مانی قیمتوں پر نوٹس لیا گیا۔

 

ای سی سی اجلاس میں حکام کی جانب سے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ گیس کی حالیہ قیمتوں میں اضافے کے بعد روٹی نان کی قیمت میں صرف 25 پیسے تک اضافہ ہونا تھا لیکن تندور مالکان نے قیمتیں 2 سے 5 روپے تک بڑھا دیں۔

اس موقع پر مشیر خزانہ حفیظ شیخ نے چھوٹے روٹی تندوروں کیلئے گیس ٹیرف 30 جون 2019ء والی پوزیشن پر بحال کرنے کی ہدایت بھی جاری کیں، تاہم گندم کی برآمد پر پابندی برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا گیا۔ کمیٹی کے مطابق چھوٹے تندور چلانے والوں کو ریلیف دیتے ہوئے ای سی سی اجلاس میں گیس کی مد میں ایک ارب 5 کروڑ روپے سبسڈی دینے کی بھی منظوری دی گئی، جب کہ بڑے کمرشل تندور یا ہوٹلز اس سبسڈی سے فائدہ نہیں اٹھا سکیں گے۔

ای سی سی کمیٹی نے واضح کرتے ہوئے کہا کہ روٹی نان کی قیمت کم نہ ہوئی تو 3 ماہ بعد سبسڈی واپس لے لی جائے گی۔ یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ وزیراعظم نے ملک بھر میں روٹی نان کی بڑھتی قیمتوں پر سخت برہمی کا اظہار کیا تھا۔

ROTI

flour mills

gas supply

Tandoor

Tabool ads will show in this div