اگرعوام کو معاشی قتل قبول نہيں تو پھرلڑنا پڑے گا، بلاول بھٹو

Jul 04, 2019
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/07/Bilawal-Speech-PPP-Jalsa-01-Mohmand-04-07.mp4"][/video]

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ اگرعوام کو معاشی قتل قبول نہيں تو پھرلڑنا پڑے گا،ميں تبديلي سرکار کيخلاف نکلاہوں، جيت ہماري ہوگي۔

مہمند میں پیپلزپارٹی کے جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ تبديلي اور انصاف کے نام پر آج حقوق چھينے جارہے ہيں، ہم نے قرباني دے کر حقوق چھينے ہيں، قربانيوں کي وجہ سے ہميں جمہوريت اور انساني حقوق ملے۔

ان کا کہنا تھا کہ قربانيوں کي وجہ سے ہميں جمہوريت اور انساني حقوق ملے، ہم نے قرباني دے کر حقوق چھينے ہيں، تبديلي اور انصاف کے نام پر آج حقوق چھينے جارہے ہیں، عوام کے جمہوري حقوق چھينے جارہے ہيں، عوام کے معاشي حقوق پر ڈالا جارہا ہے،آصف زرداري کے دور ميں قبائلي علاقوں کے بجٹ ميں 500 فيصد اضافہ کيا گيا۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ بے نظير انکم سپورٹ پروگرام شروع کيا گيا، زرداري نے چين کے ساتھ انقلابي معاہدہ کيا، آصف زرداري کے دور ميں تنخواہوں ميں 150 فيصد اضافہ ہوا، ہمارے دور ميں پينشن ميں 100 فيصد اضافہ کيا گيا، بينظير نے کہا تھا نوکری دينا جرم ہے تو بار بار جرم کريں گے، باجوڑ ميں پہلا اسپتال بھٹو نے بنايا۔

چیئرمین پی پی پی نے سوال کیا کہ سال ميں آپ کے صوبے ميں اسپتال کھلے ہيں؟ سندھ حکومت کي طرح آپ کے صوبے ميں ٹي بي کا مفت علاج ہوتا ہے ؟ لاہور کا ميٹرو منصوبہ حرام ، پشاور ميٹرو حلال ہے، يہ کيسا نظام ہے؟ وفاق ميں بيٹھے لوگ آپ کے وسائل پر ڈاکہ ڈال رہے ہيں، وفاق کي ناکامي کي وجہ سے صوبے ديواليہ ہورہے ہيں، 40 ارب روپيہ سے سوچيں کيا کيا ہوسکتا تھا ؟۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ قوم سے جھوٹ پر جھوٹ بولا جارہا ہے، زرداري دور ميں قبائلي علاقوں کا بجٹ 500فيصد بڑھايا گيا، عمران خان سچے ہيں تو قبائلي بجٹ ميں 1ہزار فيصد اضافہ کريں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ دھاندلي کرکے بجٹ پاس کروايا گيا،مہنگائي کےسونامي ميں عوام ڈوب رہے ہيں ۔

 

PTI

IMRAN KHAN

BILAWAL BHUTTO

Tabool ads will show in this div