دل دل پاکستان کے خالق نثارناسک انتقال کرگئے

Jul 03, 2019

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/07/Dil-Dil-Pakistan-Old-uncle-03-07-19.mp4"][/video]

پاکستان کے مقبول ترین ملی نغمے ’’دل دل پاکستان ‘‘ کے خالق شاعر ثار ناسک راولپنڈی میں چل بسے۔

نثار ناسک طویل عرصے سے علیل تھے، ان کی نماز جنازہ آج صبح 11 بجے ڈھوک رتہ میں ادا کی جائے گی جبکہ ان کی تدفین رتہ امرال قبرستان میں ہو گی۔

وہ اردو اور پنجابی دونوں زبانوں میں شاعری کیا کرتے تھے، ان کا لکھا گیا ملی نغمہ ’’دل دل پاکستان ‘‘1987 میں وائٹل سائنز میں شامل جنید جمشید نے گایا تھا جسے نے بےانتہا مقبولیت حاصل ہوئی اور یہ آج بھی زبان زد عام ہے۔

نثار ناسک کی ایک کتاب کا نام بھی ’’دل دل پاکستان ‘‘ رکھاگیا۔

سماء نے ان کی علالت کے دوران سال 2018 میں ایک رپورٹ بنائی تھی جس میں نثار ناسک کے بیٹے کا کہنا تھا کہ ان کی بینائی تقریباجا چکی ہے جبکہ یادداشت بھی جارہی ہے لیکن اس کے باوجود انہیں اپنی لکھی شاعری بخوبی یاد تھی۔

نثار ناسک نے ’’دل دل پاکستان ‘‘ گنگنانے کے علاوہ اپنا پسندیدہ شعر بھی سنایا جو کچھ یوں تھا ’’مجھ کو آزادی ملی بھی تو کچھ ایسے ناسک، جیسے کمرے سے کوئی صحن میں پنجرہ رکھ دے‘‘۔

نثار ناسک کو ان کی خدمات کے اعتراف میں پاکستان ٹیلی ویژن کی جانب سے لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ سے نوازا گیا تھا۔

DIL DIL PAKISTAN

Nisar Nasik

Tabool ads will show in this div