بلاول ایک ارب 54 کروڑ، وزیراعظم 11، شہباز 19 کروڑ روپے اثاثوں کے مالک

الیکشن کمیشن پاکستان نے اراکین قومی اسمبلی کے اثاثوں کی تفصیلات جاری کردیں، وزیراعظم تقریباً 11 کروڑ روپے، بلاول بھٹو زرداری ایک ارب 54 کروڑ، آصف زرداری 66 کروڑ اور شہباز شریف تقریباً 19 کروڑ روپے مالیت کے اثاثوں کے مالک ہیں۔

الیکشن کمیشن پاسکتان کی جانب سے اراکین قومی اسمبلی کے اثاثوں کی جاری کی گئی تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے چئیرمین اور وزیراعظم عمران خان کے اثاثوں کی مالیت 10کروڑ، 82 لاکھ 36 ہزار روپے ہے، انہوں نے بنی گالہ اسلام آباد میں واقع اراضی کو تحفہ ظاہر کیا ہے اور وہ اس کے مالک نہیں، اسی پر ان کا پُرشکوہ محل نما مکان تعمیر کیا گیا ہے۔

وزیراعظم نے 3 غیر ملکی کرنسیوں ڈالر، پاؤنڈز اسٹرلنگ اور یورو میں اپنے بینک کھاتے بھی ظاہر کئے ہیں، ان کے پاس 2 لاکھ روپے مالیت کی 4 بکریاں اور 152 ایکڑ زرعی اور تجارتی اراضی بھی ہے۔

عمران خان نے اپنی اہلیہ بشریٰ بی بی کے اثاثوں کی تفصیل بھی فراہم کی ہے، جس کے مطابق 3 کنال کا بنی گالا میں واقع گھر ان کی ملکیت ہے، وہ ضلع پاکپتن میں 431 کنال اراضی اور اوکاڑہ میں 266 کنال اراضی کی مالک ہیں۔

ای سی پی کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اور ان کے والد سابق صدر آصف علی زرداری دبئی کے اقامہ ہولڈر ہیں۔ بلاول بھٹو زرداری کے اثاثوں کی کل مالیت ایک ارب 54 کروڑ روپے سے زیادہ ہے، وہ دبئی میں واقع 2 ولاز کے بھی مالک ہیں۔

آصف زرداری نے 66 کروڑ روپے مالیت کے اثاثے ظاہر کئے ہیں، وہ ایک کروڑ روپے مالیت کے گھوڑوں اور دوسرے جانوروں کے مالک ہیں، جبکہ ان کے پاس ایک کروڑ 66 لاکھ روپے مالیت کا اسلحہ بھی ہے۔

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف میاں محمد شہباز شریف کے اثاثوں کی کل مالیت 18 کروڑ 96 لاکھ روپے سے زیادہ ہے، انہوں نے بیرون ملک بھی اپنی جائیداد ظاہر کی، جہاں ان کے 14 کروڑ روپے مالیت کے اثاثے ہیں، جس میں لندن کا ایک فلیٹ بھی شامل ہے۔

سابق وزیراعلیٰ شہباز شریف کی اہلیہ نصرت شہباز اپنے شوہر سے زیادہ اثاثوں کی مالک ہیں، ان کے اثاثوں کی کل مالیت 23 کروڑ روپے سے زیادہ ہے، ان کی ایک اور اہلیہ تہمینہ درانی کے اثاثوں کی کل مالیت 57 لاکھ، 65 ہزار روپے ہے۔

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سینئر نائب صدر اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے اثاثوں کی کل مالیت 60 کروڑ روپے سے زیادہ ہے۔

انسداد منشیات فورس کی کارروائی میں گرفتار ہونے والے پاکستان مسلم لیگ (ن) پنجاب کے صدر رانا ثناء اللہ خان کے اثاثوں کی کل مالیت 6 کروڑ 60 لاکھ روپے ہے جبکہ پی پی پی کے سینئر رہنماء اور سابق قائد حزب اختلاف سید خورشید احمد شاہ کے پاس 6 کروڑ روپے مالیت کے اثاثے ہیں۔

وزیر ریلوے شیخ رشید احمد 3 کروڑ 58 لاکھ روپے اثاثوں کے مالک اور 8 کروڑ 73 لاکھ روپے سے زیادہ کا بینک بیلنس رکھتے ہیں، انہوں نے 25 لاکھ روپے مالیت کے بانڈز بھی خرید کر رکھے ہیں۔

وزیر مواصلات مراد سعید کے اثاثوں میں 36 لاکھ روپے کی نقدی اور 15 تولے سونا شامل ہے۔ وزیر مملکت برائے سیفران شہریار خان آفریدی 2 کروڑ روپے کے اثاثوں کے مالک ہیں، وزیر دفاع پرویز خان خٹک 13 کروڑ 95 لاکھ روپے مالیت کے اثاثوں اور ڈھائی کروڑ روپے نقد کے مالک ہے۔

پی ٹی آئی کے ایم این اے سمیع الحسن گیلانی ایک ارب روپے سے زیادہ کے اثاثوں اور وفاقی وزیر علی زیدی 3 کروڑ روپے سے زیادہ مالیت کے اثاثوں کے مالک ہیں۔

ECP

PTI

IMRAN KHAN

ASIF ZARDARI

bilawal bhutto zardari

Election Commission Pakistan

Tabool ads will show in this div