ن لیگ نے میثاق معیشت بجٹ میں ترمیم سے مشروط کردیا

Jun 25, 2019

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/06/NA-Khawaja-Asif-Speech-25-06.mp4"][/video]

مسلم ليگ نواز نے ميثاق معيشت کو بجٹ ميں ترميم سے مشروط کرديا، خواجہ آصف کہتے ہیں کہ ميثاق معيشت کو مذاقِ معيشت کہنے کا ايک خاص تناظر ہے، اگر حکومت اپنے پيش کردہ بجٹ پر اپوزيشن سے مشاورت کرنے کو تيار ہو تو يہ ميثاق معيشت کی ابتداء ہوگی۔

قومی اسمبلی سے خطاب ميں سابق وزیر دفاع اور مسلم لیگ ن کے سینئر رہنماء خواجہ محمد آصف نے میثاق معیشت کو بجٹ میں ترمیم سے مشروط کردیا، بولے کہ ميثاق اپوزيشن اور حکومت کے درميان نہيں بلکہ سياسی جماعتوں کے درميان ہونا چاہئے۔

مزید جانیے : میثاق معیشت کے حق میں نہیں، مریم نواز

ان کا کہنا ہے کہ بجٹ کو عوام دشمن سمجھتے ہيں، حکومت بجٹ پر مشاورت کو تيار ہو تو يہ ميثاق کی ابتداء ہوگی، متفقہ بجٹ آجائے تو پھر ميثاق معيشت بھی کرليں گے، عوام دشمن بجٹ کے بعد ميثاق معيشت کی بات کی گئی۔

مریم نواز کی جانب سے میثاق معیشت کو مذاق معیشت کہنے کی بھی وضاحت کردی، بولے کہ میثاق معیشت کو مذارت معیشت کہنے کا ایک خاص نظریہ ہے، بہتر ہوتا کہ بجٹ سے پہلے میثاق معیشت کیا جاتا۔

یہ بھی پڑھیں : میثاق معیشت پر خواجہ آصف بھی مریم نواز کے ساتھ کھڑے ہوگئے

مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے شہباز شریف کی قومی اسمبلی میں تقریر کے بعد میثاق معیشت کو مذاق معیشت قرار دیا تھا۔

PTI

charter of economy

COE

Tabool ads will show in this div