میں عورت ہوں، کوئی یہ نہ کہے میں گھبرا گئی ہوں، فریال تالپور

Jun 25, 2019

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/06/Faryal-talpur-Montage-khi-Moiz-25-06.mp4"][/video]

جعلی اکاؤنٹس کيس ميں نيب کی حراست ميں رہنے والی پيپلز پارٹی کی ایم پی اے فريال تالپور نے پروڈکشن آرڈر پر سندھ اسمبلی اجلاس ميں شرکت کی، فريال تالپور کہتی ہيں ميں عورت ہوں، کوئی يہ نہ کہے کہ ميں گھبرا گئی ہوں، ميرا ضمير مطمئن ہے۔ جھوٹے الزامات لگائے جارہے ہيں۔

پیپلزپارٹی کی رکن سندھ اسمبلی اور سابق صدر آصف زرداری کی بہن فریال تالپور پر جعلی بینک اکاؤنٹس کے ذریعے کروڑوں روپے کی منی لانڈرنگ کا الزام ہے، وہ نیب کی حراست میں ہیں جبکہ عدالت کی جانب سے ان کا ریمانڈ بھی دیا جاچکا ہے۔

اسپیکر سندھ اسمبلی کی جانب سے پروڈکشن آرڈر جاری کئے جانے کے بعد وہ آج اسمبلی اجلاس میں شریک ہوئیں، ایوان میں خطاب کرتے ہوئے انہوں نے جارحانہ رویہ اپنایا، بولیں کہ میں عورت ہوں، کوئی یہ نہ کہے کہ میں گھبرا گئی ہوں۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ جیل نئی نہیں، میں کہتی ہوں گھبرانا نہیں ہے، میرے شوہر اور بھائی کو بھی جیل میں ڈالا گیا، بی بی کے مشکل حالات، شہادت دیکھی، جھوٹے الزام لگائے جارہے ہیں، میرا ضمیر مطمئن ہے۔

سابق صدر آصف زرداری بھی جعلی اکاؤنٹس کیس میں ضمانت مسترد ہونے کے بعد سے نیب کی حراست میں ہیں، انہیں بھی پروڈکشن آرڈر پر قومی اسمبلی میں اجلاس کی اجازت مل چکی ہے۔

FARYAL TALPUR

FAKE ACCOUNTS CASE

Sindh Asembly

Tabool ads will show in this div