فريال تالپور کی نا اہلی کیلئے اليکشن کميشن ميں درخواست دائر

تحريک انصاف کے رہنما حليم عادل شيخ اور ارسلان تاج نے فريال تالپور کی نا اہلی کے لیے اليکشن کميشن ميں درخواست دے دی۔

الیکشن کمیشن کو دی گئی درخواست میں حلیم عادل شیخ نے موقف اختیار کیا ہے کہ کسی بھی امیدوار کو کاغذات نامزدگی جمع کراتے وقت اپنے تمام اثاثے ڈکلیئر کرنا پڑتے ہیں مگر فریال تالپور نے اپنی تین پراپرٹیز ڈکلیئر نہیں کیں۔ الیکشن کمیشن غلط بیانی اور اثاثے چھپانے کی پاداش میں فریال تالپور کو اسمبلی کی رکنیت کیلئے نا اہل قرار دے۔

فریال تالپور لاڑکانہ سے سندھ اسمبلی کے حلقہ 10 سے منتخب ہوئیں اور اس وقت وہ جعلی اکاؤنٹس کیس میں نیب کی تحویل میں ہیں۔ انہیں 14 جون کو اسلام آباد میں واقع زرداری ہاؤس سے حراست میں لیا گیا تھا۔

درخواست جمع کرانے کے بعد حلیم عادل شیخ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم عمران خان گھوٹکی میں تعزیت کیلئے گئے تھے الیکشن کی مہم چلانے نہیں۔ لگتا ہے ڈی ایم او پر بھی نوابشاہ کا اثر ہوگیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بلاول صاحب اچھاہوا، آپ نےبتا دیا کہ بالغ ہوگئے ہیں۔ ہم بلاوجہ آپ کو بچہ سمجھ رہے تھے۔ بچہ اب معصوم نہیں رہا۔ اکاؤنٹ سے پیسے نکل آئے ہیں۔ جب بلاول کے اکاأنٹ میں پیسے آرہے تھے، اس وقت کیوں نہیں کہا کہ نہیں چاہئے۔

Politics

FARYAL TALPUR

Tabool ads will show in this div