تازہ ترین

فنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے پاکستان کو وارننگ جاری کردی

 فنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے پاکستان کی جانب سے ایف اے ٹی ایف کے ایکشن پلان پر اٹھائے گئے اقدامات پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے ڈومور کا مطالبہ کردیا۔

ایف اے ٹی ایف کا امریکی شہر اورلینڈو میں اجلاس ہوا جہاں فنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے پاکستان کووارننگ جاری کردی، ایف اےٹی ایف کے مطابق پاکستان کے مستقبل کے بارے میں فیصلہ اکتوبرمیں کیا جائے گا تاہم پاکستان اکتوبر تک ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ میں شامل رہے گا۔

اعلامیے میں کہا گیا کہ پاکستان جنوری اورمئی کی ڈیڈلائنز پرعملدرآمد میں ناکام رہا جبکہ پاکستان کو اکتوبر 2019 تک ایکشن پلان کے10 اہم نکات پر تیزی سے عمل کرنے کا کہا گیا ہے کیونکہ اکتوبر میں ایکشن پلان پر دی گئی ڈیڈ لائن ختم ہو جائے گی ۔

کیش کوریئرکے دہشت گردوں کی فنانسنگ کیلئے استعمال ہونے کا خطرہ ہے ایف اے ٹی ایف نے کیش کوریئر کے خطرے کے ادراک اور کارروائی کا مطالبہ کردیا، کہا گیا ہے کہ پاکستان دہشت گردوں کی مالی معاونت کو روکنے کے لیے مناسب اقدامات کرے ۔

حساس نوعیت کے کیسز کی نگرانی بڑھائی جائےغیر قانونی سرمایہ اور جائیداد کی منتقلی کی نگرانی سخت کی جائے، دہشت گردوں کی مالی معاونت کو روکنے کے لیے وفاقی اور صوبائی سطح پر ہم آہنگی پیدا کی جائے ۔

فنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے پاکستان کو دیئے گئے پلان پر اکتوبر تک عمل کرنا ہوگا، ناکافی پیشرفت کی صورت میں اگلا قدم اٹھایا جائے گا۔

FATF

Tabool ads will show in this div