لاہور ہائیکورٹ نے خواجہ برادران کی ضمانت خارج کردی

Jun 18, 2019

لاہور ہائی کورٹ نے پیرا گون کیس میں گرفتار خواجہ سعد رفیق اور خواجہ سلمان رفیق کی ضمانت کی درخواست خارج کردی۔ اس سے قبل عدالت نے کچھ دیر کیلئے کیس کا فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

لاہور ہائی کورٹ کے جج جسٹس باقر علی نجفی کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے خواجہ سعد رفیق اور خواجہ سلمان رفیق کی ضمانت کی درخواست سے متعلق کیس کی سماعت کی۔ خواجہ برادران کی جانب سے ان کے وکیل نے آج دلائل دیتے ہوئے کہا کہ پیراگون کیس سے ان کے موکل کا کوئی تعلق نہیں، قیصر امین بٹ اور ندیم ضیا دوست ہیں، پارٹنر نہیں۔

سماعت کے دوران نیب کے وکیل کا کہنا تھا کہ خواجہ برادران نے قیصر بٹ کے ساتھ مل کر متعلقہ کمپینیاں بنائیں، جس ميں سعد رفیق کے نام پر کروڑوں روپے آئے، بعد ميں نيب کی وجہ سے پراني کمپنی ختم کر کے نئی لمیٹڈ کمپنی بنا لی اور خواجہ فيملي پيچھے چلي گئي۔

نيب پراسيکيوٹر نے بتايا کہ دو ہزار سات ميں انچاس ملين روپے کے پرائز بانڈز نکلنے کي وجہ سے آمدن سے زائد اثاثوں کی انکوائری بند کردی گئی، خواجہ برادران نے اپنی سستی زمین دے کر پیراگون کی مہنگی زمین تبادلے میں لی۔

اس موقع پر خواجہ برادران کے وکيل نے نيب الزامات کي ترديد کرتے ہوئے کہا کہ سعد رفيق پيراگون کے مالک نہیں، وہ سپریم کورٹ میں حلف نامہ بھي دے چکے ہيں، پیراگون غیر قانونی اسکیم ہے، ٹی ایم اے نے اسکیم کوعبوری منظور کیا، ایل ڈی اے نے پیراگون کی منظوری کی درخواست مسترد کی تھی۔ نیب کے وکیل نے کہا کہ نقشوں پر پلاٹ فروخت کرکے لوگوں سے پیسے ہتھیاتے رہے، عدالت نے استفسار کیا کہ کیا مطمئن کرنے کے لیے پیراگون انتظامیہ نے خوش نما اشتہارات دیئے؟

وکیل نیب نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ ایک ہزار کینال کی اسکیم غیرقانونی طور پر 7ہزار کینال تک پھیلا دی، لاہور ہائی کورٹ نے استفسار کیا کہ اسکیم غیر قانونی تھی تو ایل ڈی اے نے کیا کارروائی کی؟ نیب کے وکیل نے کہا کہ ایک بھائی ریلوے کا وزیراور دوسرا بھائی صحت کا وزیرتھا، بااثر افراد کے خلاف ایل ڈی اے کیسے کارروائی کرتا؟

خواجہ برداران کے وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ بجٹ اجلاس کے باعث عبوری ضمانت منظورکی جائے، اجلاس میں تجاویزکے لیے ماہرین سے مشاورت ضروری ہے، درخواست ضمانت پر حتمی فیصلے تک عبوری ضمانت منظور کی جائے۔ عدالت نے دونوں بھائیوں کی ضمانت سے متعلق فيصلہ محفوظ کرتے ہوئے کچھ دیر کیلئے سماعت ملتوی کردی۔ بعد ازاں عدالت نے فیصلے سناتے ہوئے خواجہ برادران کی ضمانت خارج کردي۔

PARAGON SCANDAL

Tabool ads will show in this div