ملزم راجاپرویزاشرف پرفردجرم عائدکرنیکامعاملہ سترہ جنوری تک مؤخر

اسٹاف رپورٹ
اسلام آباد : رینٹل پاور کیس میں سابق وزیراعظم راجا پرویز اشرف کی احتساب عدالت میں پیشی ہوئی، جس کے بعد ملزم راجا پرویز اشرف پر فرد جرم عائد کرنے کا معاملہ سترہ جنوری تک ٹل گیا۔ راجا جی کہتے ہیں الزامات بے بنياد ہيں، کوئی کرپشن ثابت نہيں ہوگی۔

سابق وزیراعظم راجا پرویز اشرف احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی عدالت میں پیش ہوئے۔ ان کے وکیل فاروق ایچ نائیک نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ کیس کے دو ملزمان نے لاہور ہائی کورٹ سے حکم امتناع لے رکھا ہے۔ جب تک ان کا فیصلہ نہیں آتا ان کے مؤکل پر فرد جرم عائد نہیں کی جا سکتی۔

عدالت نے راجا پرویز اشرف سمیت دیگر ملزمان پر فرد جرم عائد کرنے کا معاملہ مؤخر کر دیا اور نیب کو ریفرنس سے غیر متعلقہ افراد کے نام نکالنے کیلئے سترہ جنوری تک کی مہلت دے دی۔ فاروق ایچ نائیک کا کہنا تھا کہ راجا پرویز اشرف پر کرپشن کا کوئی الزام نہیں، فرد جرم عائد ہوئی تو دفاع کریں گے۔

راجا پرویز اشرف نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ وہ چاہتے تھے کہ یہ کیس عدالت میں آئے اور لوگوں کو حقائق پتہ چل سکیں۔ راجا پرویز مشرف کیس سے متعلق پوچھے گئے سوال پر راجا جی کا کہنا تھا کہ آپ پرویز مشرف کیس سننا چاہتے ہیں پرویز اشرف نہیں۔ انہوں نے پرویز مشرف کی جلد صحت یابی کیلئے دعا کی۔ سماء

nepra

responsibility

warrant

Tabool ads will show in this div