مبینہ غلط انجکشن لگنے سے مفلوج ہو جانے والی بچی نشوہ چل بسی

[caption id="attachment_1528437" align="alignnone" width="800"] تصویر: اے ایف پی[/caption]

کراچی میں  مبینہ طور پر غلط انجکشن کے باعث مفلوج ہو جانے والی بچی نشوہ انتقال کرگئی۔

نجی اسپتال دارالصحت میں مبینہ غلط انجکشن لگنے کے باعث بچی کی حالت بگڑ گئی تھی جس کے بعد اسے لیاقت نیشل اسپتال کے آئی سی یو میں منتقل کیا گیا تھا جہاں آج وہ دم توڑ گئی۔

غلط انجکشن لگنے سے 9 ماہ کی نشوا کا 71 فیصد دماغ مفلوج ہوچکا تھا۔

نشوہ کے والد قیصرعلی نے تقریبا 2 ہفتے قبل اپنی نو ماہ کی جڑواں بیٹیوں کو طبیعت خراب ہونے پر اسپتال میں داخل کرایا تھا جہاں انجکشن لگنے سے نشوہ کی حالت غیر ہوئی۔ والد نے اسپتال انتظامیہ کے خلاف واقعے کا مقدمہ شارع فیصل تھانے میں درج کرا رکھا ہے۔

نشوہ کیس، گرفتار اسپتال ملازم نے بیان بدل دیا

کیس رجسٹرڈ ہونے کے بعد عدالت نے انجکشن لگانے والے ملازم اسپتال ملازم معیز کو جسمانی ریمانڈ پر پولیس کی تحویل میں دے دیا تھا۔

معیز کے بعد ایک نرس کو بھی پولیس نے تحویل میں لیا جس نے خود پرلگے تمام الزامات مسترد کرديے۔ ثوبيہ کا کہنا ہےکہ آغا معيزکي مدد کيلئے ڈرپ ميں لگنے والا انجکشن بناکرديا تھا ليکن دوسرا انجکشن آغامعيز نے خود بنايا۔

نرس کے مطابق پردہ لگا ہونے کي وجہ سے نہيں ديکھ سکي کہ کونسا انجکشن ہاتھ پرلگايا اور کونسا ڈرپ ميں ديا جبکہ دارالصحت اسپتال کے نرسنگ منيجرعاطف کاکہنا ہے کہ انجيکشن لگانا معيز کا نہيں، ثوبيہ کا کام تھا۔

Nishwa

Nashwa

Incorrect dosage

9 months old

minor girl passes away

Tabool ads will show in this div