معروف بالی ووڈ اداکارہ مودی سے متاثر،بی جے پی میں شامل

بھارتی ذرائع ابلاغ سے جاری خبروں کے مطابق معروف بالی ووڈ اداکارہ جیا پرادا نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) میں شمولیت اختیار کرلی۔

 بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) میں شمولیت اختیار کرنے کے بعد قوی امکان ہے کہ بی جے پی اُنہیں سماج وادی پارٹی کے سینیر رہنما اعظم خان کے خلاف رام پور سے میدان میں اتارے گی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق جیا پرادا اور اعظم خان ایک دوسرے کے سخت حریف تصور کیے جاتے ہیں۔ جیا پرادا کا کہنا ہے کہ وہ وزیراعظم نریندر مودی کے کام سے متاثر ہوکر بی جے پی میں شامل ہورہی ہیں اور یہ ان کی زندگی کا اہم لمحہ ہے۔

بھارتی اداکارہ نے اپنے سیاسی کیریئر کا آغاز 1994ء میں تیلگو دیشم پارٹی سے کیا تھا اور آندھرا پردیش سے راجیہ سبھا کی رکن رہیں۔ ٹی ڈی پی کے سربراہ چندرا بابو نائیڈو سے تعلقات خراب ہونے کے بعد جیا پرادا نے سماج وادی پارٹی میں شمولیت اختیار کرلی تھی۔ سماج وادی پارٹی کے اس وقت کے لیڈر امر سنگھ کی معتمد جیا پرادا نے 2004ء اور 2009ء کے انتخابات میں رام پور سے کامیابی حاصل کی۔

جیا پرادا کو 2010ء پارٹی لیڈر شپ سے اختلافات کے دوران امرسنگھ کی حمایت کرنے پر سماجی وادی پارٹی سے نکال دیا گیا تھا، انہوں نے اپنی علاقائی جماعت بنائی اور 2012ء کے اسمبلی انتخابات میں حصہ لیا لیکن بہت زیادہ کامیابی نہ مل سکی۔ اس کے بعد بھارتی اداکارہ راشٹریہ لوک دل میں شامل ہوگئیں اور 2014ء میں بجنور سے الیکشن لڑا، جس میں وہ چوتھے نمبر پر آئیں۔

UP

Utter Pardesh

Indian Elections 2019

Tabool ads will show in this div