دو لڑکیوں کے مبینہ اغواء کا معاملہ نیا رخ اختیار کرگیا

سندھ سے دو نوعمر لڑکيوں کے مبينہ اغواء کا معاملہ نيا رُخ اختيار کر گيا۔ دونوں بہنوں نے تحفظ فراہم کرنے کیلئے اسلام آباد ہائی کورٹ سے رجوع کر لیا۔ سینیٹ کی قائمہ کمیٹی داخلہ نے بھی معاملے کا نوٹس لیتے ہوئے رپورٹ طلب کر لی۔

عدالت عالیہ میں دائر درخواست میں دونوں بہنوں نے مؤقف اپنایا کہ انہوں نے اپنی مرضی سے اسلام قبول کیا کسی نے ان کے ساتھ زبردستی نہیں کی۔

وزیراعظم نے نوعمر ہندو لڑکیوں کے اغواء کا نوٹس لے لیا

دونوں بہنوں روینہ اور رینا کا موقف ہے کہ میڈیا میں غلط پروپیگنڈے کے باعث ہماری اور ہمارے شوہروں کی جان کو خطرہ ہے۔ عدالت سیکیورٹی فراہم کرنے کے احکامات دے۔

درخواست میں وزارت داخلہ، وزیراعلیٰ سندھ کے علاوہ پنجاب، سندھ اور اسلام آباد کے آئی جیز کو فریق بنایا گیا ہے۔

ہندو لڑکیوں کے اغواءکا معاملہ،  بھارتی مداخلت پر فواد چوہدری کا کرارا جواب

دوسری جانب سینیٹ کی قائمہ کمیٹی داخلہ نے بھی معاملے کا نوٹس لیتے ہوئے وزارت داخلہ اور سندھ حکومت سے ایک ہفتے میں رپورٹ طلب کر لی ہے۔

چیئرمین کمیٹی کا کہنا ہے کہ اقلیتوں کی بچیوں کے ساتھ ایسا سلوک ناقابل قبول اور افسوسناک ہے۔ متاثرہ والدین کو ہر صورت میں انصاف دلائیں گے۔

Reena

MINORITIES

FAWAD CHAUDARY

PM IMRAN KHAN

Hindu Girls

Rawina

Tabool ads will show in this div