مختاراں مائی زیادتی کیس کے ملزمان کی بریت کےخلاف درخواست سماعت کیلئےمنظور،سپریم کورٹ

پنچائیت کے حکم پراجتماعی زیادتی کیس میں سپریم کورٹ نے ملزمان کی بریت کے خلاف مختاراں مائی کی نظرثانی درخواست 8 سال بعد سماعت کیلئے مقرر کردی۔

مختاراں مائی کی نظرثانی درخواست پر جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں سپریم کورٹ کا 3 رکنی بینچ بدھ کو سماعت کرے گا۔ مختاراں مائی نے ملزمان کی بریت کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کررکھا ہے۔

مختاراں مائی کی نظرثانی درخواست پر سماعت 8 سال بعد ہوگی۔ عدالت نےان کے وکیل اعتزاز احسن کو بھی نوٹس جاری کردیا ہے۔ انسداد دہشتگردی کی عدالت نے  پنچائت کے حکم پر مختاراں مائی سے زیادتی کرنے والے 6 ملزمان کو 2002 میں سزائے موت سنائی تھی۔ ہائیکورٹ نے 2005 میں 5 ملزمان کو بری کرتے ہوئے ایک ملزم کو عمر قید کی سزا دی تھی۔

سپریم کورٹ نے ہائیکورٹ کا فیصلہ برقراررکھتے ہوئے 2011 میں اپیلیں مسترد کردی تھیں۔

Mukhtaran Mai Gang Rape Case

Tabool ads will show in this div