ڈاکٹر فاروق ستار پر حملے کا منصوبہ ناکام، 8 ملزمان گرفتار

کراچی میں دہشتگردی کی حالیہ لہر پر سیکیورٹی اداروں کی کارروائیوں جاری ہیں، رینجرز نے دہشتگرد گروہ پکڑ لیا۔ کرنل فیصل کہتے ہیں ایم کیو ایم پاکستان اور پی ایس پی رہنماء پر حملوں میں ملوث ایم کیو ایم لندن سلیم بیلجیئم گروپ کے 8 کارندوں کو گرفتار کرلیا گیا، ملزمان ڈاکٹر فاروق ستار پر حملے کا منصوبہ بنارہے تھے۔

چند روز کے دوران کراچی میں ٹارگٹ کلنگ کے متعدد واقعات رونما ہوچکے ہیں، جس کے بعد سیکیورٹی اداروں نے ملزمان کی گرفتاری کیلئے کارروائیوں کا آغاز کیا۔

رینجرز نے تازہ کارروائی میں 8 ملزمان کو گرفتار کرلیا، کرنل فیصل نے میڈیا سے گفتگو میں بتایا کہ ایم کیو ایم پاکستان کے کارکنان اور پاک سرزمین پارٹی کے رہنماء پر حملوں میں ملوث 8 دہشت گردوں کو گرفتار کرلیا گیا، ملزمان سابق رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر فاروق ستار پر بم حملے کی منصوبہ بندی کررہے تھے۔

رینجرز حکام کے مطابق ملزمان کا تعلق ایم کیو ایم لندن کے کارندے سلیم بیلجیئم گروپ سے ہے، دہشتگرد کوڈ ورڈ میں باتیں کرتے تھے، سلیم بیلجیئم ٹارگٹ کلرز کی مالی معاونت بھی کرتا ہے، گرفتار تخریب کاروں کی نشاندہی پر دھماکا خیز مواد بھی برآمد کرلیا گیا، ملزمان نے پی ایس پی دفتر پر حملے میں ملوث ٹیم ممبرز کے نام بتادیئے۔

کرنل فیصل اعوان کا کہنا ہے کہ ماضی میں سلیم بیلجیئم کو گرفتار کرکے پولیس کے حوالے کیا تھا، سلیم بیلجیئم بانی ایم کیو ایم کے حکم پر قتل کرواتا تھا، اس نے ٹارگٹ کلرز کو لیاقت آباد میں مکان لیکر دیا، دہشتگرد واٹس ایپ کے ذریعے رابطہ کرتے تھے۔

رینجرز تحقیقات کے مطابق دہشتگردوں نے 23 دسمبر کو گلبہار میں پی ایس پی آفس پر حملہ کیا، جوہر میں ایم کیو ایم کی محفل میلاد پر بھی کریکر پھینکا، ملزمان نے نیو کراچی میں ایم کیو ایم یو سی آفس پر حملہ کیا۔

TARGET KILLER

PSP

Tabool ads will show in this div