جعلی اکاؤنٹس کیس: آصف زرداری اور فریال تالپور کی نظرثانی درخواستیں خارج

Feb 19, 2019

جعلی بینک اکاؤنٹس کیس میں آصف زرداری اور فریال تالپور کی نظر ثانی کی تمام درخواستیں سپریم کورٹ نے خارج کردیں، متفرق درخواست میں بلاول بھٹو اور وزیراعلیٰ سندھ کو نظرثانی کی نئی درخواستیں دائر کرنے کی اجازت دے دی گئی۔

سپریم کورٹ نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں سابق صدر آصف زرداری اور ان کی بہن فریال تالپور، عبدالغنی مجید اور انور مجید کی نظر ثانی کی تمام درخواستیں خارج کردیں۔

دوران سماعت آصف زرداری کے وکیل لطیف کھوسہ نے دلائل میں کہا کہ عدالت نے مقدمہ نیب کو منتقل کرکے اور پھر کراچی منتقل کرکے مداخلت کی، سارے ملزمان کا تعلق کراچی سے ہے تو تفتیش بھی وہیں ہونی چاہئے، جے آئی ٹی بنائے جانے پر بھی اعتراضات اٹھائے۔

چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے ریمارکس میں کہا کہ نیب کا دائرہ اختیار صرف کراچی یا اسلام آباد نہیں بلکہ پورے ملک میں ہے، تحقیقات کا اصل فورم نیب ہی ہے۔

آصف زرداری کے وکيل لطيف کھوسہ مزید کہتے ہيں کہ ايک اپيل کا حق ہر کسی کو ہونا چاہئے، کسی کی بھی قوت فيصلہ درست يا غلط ہوسکتی ہے، نظرثانی درخواست پر وہی جج سماعت کرتے ہيں، جنہوں نے کيس کا فيصلہ ديا ہو۔

سندھ کے میگا منی لانڈرنگ اسکینڈل کی تحقیقات کے دوران جعلی بینک اکاؤنٹس سے اربوں روپے برآمد ہوئے، یہ تمام اکاؤنٹس غیر قانونی طور پر کھولے گئے تھے، جن لوگوں کے نام پر اکاؤنٹس کا انکشاف ہوا وہ بینک کھاتوں سے بے خبر نکلے۔

جعلی اکاؤنٹس کی تحقیقات میں سابق صدر آصف زرداری اور ان کی بہن فریال تالپور سمیت پیپلزپارٹی کے کئی رہنماؤں سے بھی تحقیقات کی گئیں، آصف زرداری اور فریال تالپور نے گرفتاری سے بچنے کیلئے ضمانت کرارکھی ہے۔

FARYAL TALPUR

ASIF ZARDARI

fake account

CJP Fake Account

Tabool ads will show in this div