اللہ کا حکم ہے سچی شہادت دو، چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ

سپریم کورٹ نے دہرے قتل کے ملزم کی بریت کیخلاف اپیل خارج کردی ۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ اللہ کاحکم ہے سچی شہادت دو، قانون بھی کہتا ہے کہ جھوٹے گواہ کی شہادت خارج کردی جائے۔

سپریم کورٹ میں مندرہ کے علاقے میں رشتے کے تنازع پر2 افراد کے قتل سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ دورانِ سماعت عدالت نے ملزم حنیف کی بریت کیخلاف درخواست خارج کردی ۔

چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے ریمارکس دیے ملزمان پر الزام ہے رشتہ لینے گئے اور2  افراد کو قتل کر آئے۔ جن سے رشتہ مانگنا ہو انہیں کوئی جان سے نہیں مارتا۔ اس کیس میں گواہان نے سچ نہیں بولا، دنیا کا کوئی قانون جھوٹی گواہی تسلیم نہیں کرتا، قرآن کہتا ہے جو ایک جھوٹی شہادت دے ،اس کی کوئی گواہی نہ مانو۔

سال 2004 میں پیش آنے والے قتل کے واقعے میں ٹرائل اور ہائیکورٹ نے 2 ملزمان کو بری کیا تھا، سپریم کورٹ نے ملزمان کی بریت کا فیصلہ برقرار رکھتے ہوئے اپیل خارج کردی ۔

CHIEF JUSTICE

Chief Justice Asif Saeed Khosa

Double murder

Tabool ads will show in this div