افغان طالبان کا وفد وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کریگا

افغان طالبان اور امریکا کے درمیان مذاکرات کا اگلا دور پاکستان میں ہوگا، طالبان وفد 18 فروری کو وزیراعظم عمران خان سے بھی ملاقات کرے گا۔

ترجمان افغان طالبان ذبیح اللہ مجاہد کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق امریکا اور طالبان کے درمیان مذاکرات کا اگلا دور 18 فروری سے اسلام آباد میں شروع ہوگا۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ طالبان وفد وزیر اعظم عمران خان سے بھی ملاقات کرے گا جس میں پاک افغان تعلقات اور افغان مہاجرین سے متعلق امور پر بات ہوگی، افغان طالبان کا وفد پاکستانی حکومت کی دعوت پر اسلام آباد آرہا ہے۔

طالبان اور امریکا کے درمیان امن مذاکرات کی بحالی میں کردار ادا کرنے کا سہرا پاکستانی وزیراعظم عمران خان اپنے سر لیتے رہے ہیں۔ طالبان، امریکا مذاکرات کا پہلا دور یو ای اے، دوسرا قطر کے دارالحکومت دوحا میں بھی ہوچکا ہے جبکہ روس کے دارالحکومت ماسکو میں بھی افغان طالبان اور اپوزیشن جماعتوں کے درمیان مذاکرات کا ایک دور ہوا تھا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستان پاکستان کی مدد سے افغان طالبان اور امریکا کے درمیان ابوظہبی میں مذاکرات ہوئے، ہمیں دعا کرنی چاہئے کہ امن مذاکرات نتیجہ خیز ہوں اور تین دہائیوں سے جاری افغان عوام کی مشکلات کا خاتمہ ہو۔

افغانستان میں 17 سال سے جاری جنگ کے خاتمے کیلئے طالبان سے مذاکرات میں نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد امریکی ٹیم کے سربراہ ہیں۔

USA

TALIBAN

PEACE TALK

Islambad

Zabihullah Mujahid

Tabool ads will show in this div