چائنيز قونصليٹ حملہ،سہولت کار یو اے ای سے گرفتار

قانون نافذ کرنے والے اداروں نے چائينز قونصليٹ حملے کے سہولت کار کو متحدہ عرب امارات سے گرفتار کرکے کراچی منتقل کردیا۔ سہولت کار کے افغانستان میں بھی رابطوں کا انکشاف ہوا ہے۔

تفتیشی حکام کے مطابق گرفتار سہولت کار راشد بلوچ کراچي ميں تخريب کاري کي ديگر وارداتوں ميں ملوث تھا، ملزم کے افغانستان ميں بھي ساتھيوں سے رابطے تھے۔ دہشت گرد سے چائنیز قونصل خانے کا نقشہ بھي برآمد کیا گیا۔

 

پولیس کے مطابق سہولت کار کا تعلق کالعدم تنظیم سے ہے، جس نے 28 نومبر کو کراچی میں چین کے قونصلیٹ پر ہونے والے حملے میں سہولت کاری کی۔ ملزم کو یو اے ای کے قانون نافذ کرنے والے اداروں نے کچھ دن قبل شارجہ سے گرفتار کیا تھا۔

 

دورانِ تفتیش اس بات کا بھی انکشاف ہوا کہ حملے سے چند روز قبل راشد کے بینک اکاؤنٹ میں 9 لاکھ 49 ہزار روپے منتقل ہوئے، جس سے اس نے حملہ آوروں کو تمام تر مالی معاونت فراہم کی۔

 

واضح رہے کہ گزشتہ برس نومبر میں 3دہشت گردوں نے کراچی کے علاقے کلفٹن میں ہائی سیکیورٹی زون میں قائم چینی قونصلیٹ میں داخل ہونے کی کوشش کی تھی لیکن قانون نافذ کرنے والے اہلکاروں ساتھ ہونے والے مقابلے میں تمام دہشت گرد مارے گئے تھے۔

 

ملزم راشد کی گرفتاری سے قبل کراچی پولیس نے دعویٰ کیا تھا کہ انہوں نے کراچی، حب اور کوئٹہ سے 5 سہولت کاروں کو گرفتار کیا ہے جو پاک چین اقتصادی راہداری(سی پیک) کو سبوتاژ کرنے اور دونوں ممالک میں اختلافات پیدا کرنا چاہتے تھے۔

INTELLIGENCE

BLA

chinese consulate

Tabool ads will show in this div