ایبٹ آباد میں نوجوان کا ہوائی فائر اس کو ہی لگ گیا، ویڈیو وائرل

پاکستان میں شادی بیاہ کے موقع پر بعض لوگ ہوائی فائرنگ کرکے خوشی کا اظہار کرتے ہیں جس کے باعث سالانہ درجنوں افراد جان سے چلے جاتے ہیں۔ مگر ایبٹ آباد میں ہوائی فائرنگ کے دوران نوجوان کو اپنی ہی چلائی ہوئی گولی لگ گئی جس کی حالت انتہائی تشویشناک ہے۔

خیبر پختونخوا کے شمالی ضلع ایبٹ آباد میں شادی کے دوران چند افراد ہوائی فائرنگ کر رہے تھے۔ اس دوران عکاش نامی نوجوان کی چلائی ہوئی گولی اس کی آنکھ، کان اور سر کو چیرتی ہوئی نکل گئی۔

اس واقعہ کی ویڈیو بھی منظر عام پر آگئی ہے جو موبائل فون سے دوسرے دوست نے بنائی۔ ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ  چار، پانچ افراد لائن میں کھڑے ہوکر کلاشنکوف اور پستول سے ہوائی فائرنگ کر رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: فیصل آباد، ہوائی فائرنگ کی ویڈیوز انٹرنیٹ پر اپ لوڈ کرنے والا نوجوان گرفتار

اس موقع پع عکاش نے جب گولی چلائی تو وہ پھنس گئی۔ نوجوان نے کلاشنکوف کا رخ اپنی جانب کرکے کرکے اس میں پھنسی گولی نکالنے کی کوشش کی جس پر اچانک گولی چل گئی جو عکاش کی آنکھ، ناک اور سر کو چیرتے ہوئے نکل گئی۔

عکاش کو فوری علاج کے لیے ایوب ٹیچنگ اسپتال منتقل کردیا گیا جہاں اس کی حالت تشویشناک بتائی جارہی ہے۔

خیبر پختونخوا حکومت نے 1988 میں ایک ایکٹ کے ذریعے شادی بیاہ سمیت ہر قسم تقاریب میں ہوائی فائرنگ پر پابند عائد کر رکھی ہے۔ اس ایکٹ کے تحت ہوائی فائرنگ کرنے والوں کو ایک سال قید اور 10 ہزار روپے تک جرمانہ ہوسکتا ہے جبکہ کوئی بھی پولیس افسر ہوائی فائرنگ کرنے والے ملزم کو بغیر وارنٹ گرفتار بھی کرسکتا ہے۔

aerial firing

Tabool ads will show in this div