سعید غنی نے شادی ہالز مالکان کو منالیا، ہڑتال مؤخر

وزیر بلدیات سعید غنی نے شادی ہالز مالکان کو منا لیا، ایسوسی ایشن نے ہڑتال کی کال واپس لینے کا اعلان کردیا۔

سپریم کورٹ کی ہدایت پر ایس بی سی اے کی جانب سے رہائشی پلاٹس پر قائم شادی ہالز کو 3 دن کا نوٹس دیا گیا تھا جس کے بعد شادی ہالز مالکان کی ایسوسی ایشن نے احتجاج کرتے ہوئے پیر سے ہڑتال کا اعلان کیا تھا۔

وزیر بلدیات سندھ سعید غنی نے شادی ہال مسمار نہ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ سپریم کورٹ کی ہدایت پر عمل نہیں کرسکتے۔

تازہ اطلاعات کے مطابق وزیر بلدیات کے شادی ہالز مالکان کے ساتھ ہونیوالے مذاکرات کامیاب ہوگئے، جس کے بعد ایسوسی ایشن نے ہڑتال کی کال واپس لینے کا اعلان کیا ہے۔

صدر شادی ہالز مالکان ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ وزیر بلدیات سندھ سعيد غنی کی یقین دہانی پر ہڑتال نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

تفصیلات پڑھیں : کراچی میں 930 رہائشی پلاٹس پر کمرشل سرگرمیاں، ایس بی سی اے کی رپورٹ تیار

سعید غنی کا اس سے قبل کہنا تھا کہ سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی نے معاملے سے متعلق کمیٹی تشکیل دیدی، سندھ حکومت سپریم کورٹ میں نظرثانی اپیل دائر کرے گی، پیر کو شادی ہالز کیخلاف کارروائی نہیں کی جائے گی۔

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے بھی شادی ہالز کو دیئے گئے نوٹسز فوری واپس لینے کی ہدایت کردی، اجلاس کے دوران انہوں نے کہا کہ شادی ہالز ایسوسی ایشن کے تحفظات دور کریں گے، عدلیہ نے کہا ایس بی سی اے مسئلے کو دیکھتے ہوئے کارروائی کرے۔

اس سے قبل کراچی ميں شادی ہال مالکان نے کل بروز اتوار سے تمام ہالز بند کرنے کا اعلان کرتے ہوئے دھمکی دی تھی کہ اگر سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی نے ہال گرانے کا فيصلہ واپس نہ ليا تو کسی کو شادی کیلئے ہال نہيں ملے گا۔

انہوں نے اعلان کیا تھا کہ کل سے ہال بند رہيں گے، فنکشن نہيں ہوگا، شادي ہال مالکان نے مزید واضح کیا کہ بکنگ کي رقم بھی واپس نہيں ہوگی، ہمارے شادی ہال جائز ہيں، نوٹس ظلم ہے۔

ویڈیو دیکھیں : ہالز بند، شادیاں کہاں ہوں گی؟

ايس بي سي اے نے 3 دن ميں شادي ہالز خالي کرنے کا نوٹس جاری کیا تھا، شہر بھر کے 50 فيصد سے زائد علاقوں ميں نوٹس جاری کئے ہیں، رہائشی پلاٹس کے کمرشل استعمال پر نوٹسز جاری کيے گئے ہیں۔

ہفتے کی صبح شادي ہال مالکان نے يونيورسٹي روڈ بند کرکے احتجاج بھی کيا۔ اس دوران شادی ہال مالکان نے دوبارہ سوک سینٹر میں گھسنے کی کوشش کی تو اس دوران سیکورٹی اسٹاف سے شدید تلخ کلامی بھی ہوئی۔

مزید جانیے : ایس بی سی اے کا رہائشی پلاٹس پر قائم کمرشل عمارتوں کو 3 دن میں گرانے کا فیصلہ

دوسری جانب ایس بی سی اے حکام نے ادارے میں غیراعلانیہ ایمرجنسی نافذ کر رکھی ہے، شہر بھر کے رہائشی سے کمرشل کئے گئے پلاٹوں کو نوٹس دینے کا کام تیز کردیا ہے جبکہ پیر سے آپریشن کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے۔

معروف کیٹرر فہد میمن نے بتایا ہے کہ اتوار کے دن 700 شادی ہالز بُک ہيں، اگر شادی ہال مالکان نے تقریبات نہ ہونے دیں تو نقصان کروڑوں ميں ہوگا، ايک شادي ہال کا کم سے کم کرایہ ڈھائي لاکھ روپے  ہے۔

SBCA

Wedding Halls

Tabool ads will show in this div