کولمبیا میں کار بم دھماکا، ہلاکتیں 21 تک پہنچ گئیں

University students light candles set on top of gas canisters used to crack down on protesters, in a demonstration calling for the anti-riot police force to be dismantled, in Medellin, Colombia, on January 17, 2019. (Photo by JOAQUIN SARMIENTO / AFP)
University students light candles set on top of gas canisters used to crack down on protesters, in a demonstration calling for the anti-riot police force to be dismantled, in Medellin, Colombia, on January 17, 2019. (Photo by JOAQUIN SARMIENTO / AFP)

کولمبیا میں پولیس اکیڈمی کے باہر کار بم دھماکے میں ہلاک افراد کی تعداد 21 ہوگئی، 68 زخمی ہیں، ہلاکتوں میں مزید اضافے کا خطرہ ہے۔

غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق جنوبی امریکی ملک کولمبیا کے دارالحکومت بوگوٹا میں پولیس اکیڈمی کے باہر کار بم دھماکے میں مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 21ہوگئی ہے، حکام نے بھی ہلاکتوں کی تصدیق کردی ہے۔

جمعرات کے روز ہونیوالے خوفناک دھماکے میں 68 سے زیادہ کیڈٹ زخمی بھی ہوئے، اسپتال میں کئی زخمیوں کی حالت تشویشناک ہے، ہلاکتوں میں اضافہ بھی ہوسکتا ہے۔

خبر ایجنسی کے مطابق کولمبین وزیر دفاع نے صدارتی محل سے گفتگو کرتے ہوئے دھماکے کا الزام شدت پسند گروپ ای ایل این پر عائد کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ 56 سالہ بمبار کی شناخت کرلی گئی ہے، جو گزشتہ 25 سال سے ای ایل این کا رکن ہے۔

گولیرمو بوٹیرو نے مزید کہا کہ شدت پسند وینزویلا سے متصل سرحدی علاقے میں اس حملے کی گزشتہ 10 ماہ سے منصوبہ بندی کررہے تھے۔

DEFENSE MINISTER

Car Bomb Blast

Bogota

21 Dead

Guillermo Botero

Tabool ads will show in this div