مغربی بھارت میں سوائن فلو سے 40 افراد ہلاک

مغربی بھارت میں سوائن فلو سے 40 افراد ہلاک، جب کہ 1000 افراد میں سوائن فلو کی تصدیق کی گئی ہے۔ قابل ذکر بات یہ ہے کہ سوائن فلو کے شکار علاقے میں غیر ملکی بڑی تعداد میں موجود ہیں۔

فرانسیسی خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کے مطابق گزشتہ سال بھارت میں سوائن فلو سے ہلاک افراد کی تعداد 1 ہزار 100 تھی، جب کہ 15000 افراد اس وائرس سے متاثر ہوئے، جن میں ایچ 1این 1 سوائن فلو وائرس کی تشخص کی گئی۔

 

طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ موسمی درجہ حرارت میں اچانک تبدیلی کی وجہ سے صوبے بھر میں فلو، ڈینگی بخار، ملیریا اور دیگر متعدی بیماریاں پھیلی ہوئی ہیں۔ اتنی بڑی تعداد میں لوگوں کے متاثر ہونے کی وجہ ایک انسان سے دوسرے انسان تک ان وائرس کی منتقلی ہے۔

 

موصول رپورٹس کے مطابق راجھستان اور نیو دہلی میں سوائن فلو سے متاثرہ افراد کی تعداد زیادہ ہے۔ سردی کے موسم میں یہ وائرس دسمبر اور جنوری سے مغربی اور شمالی علاقوں میں پھیلنا شروع ہوا۔

راجھستان کی ضعلی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ محلات اور ریگستان کی سیر کو آنے والے افراد ڈاکٹرز سے اجازت لے کر آئیں۔ شہر کی انتظامیہ نے آبادی کو اس خطرناک وائرس سے بچانے اور شعور اجاگر کرنے کیلئے گھر گھر رابطہ مہم چلانے کا فیصلہ کیا ہے۔

 

انتطامیہ نے وائرس سے آگاہی کیلئے مختلف کیمپز اور مہم کا آغاز کردیا ہے، جس میں احیتیاطی تبدابیر اور اس کی وجوہات سے متعلق لوگوں کو آگاہی فراہم کی جا رہی ہے۔

اس وائرس سے ہلاک ہونے والوں میں بھارتی وزیراعظم مودی کا اعلی سطح کا ایڈوائزر امیت شاہ بھی شامل ہے۔ فی الحال حکومت کی جانب سے راجھستان سے متعلق کوئی سفری ہدایات جاری نہیں کی گئیں۔

HEALTH

Swine flu

Medical Test

Jodhpur

Tabool ads will show in this div