رمضان کی آمد آمد، اشیائے خورد و نوش مہنگی، ذخیرہ اندوزی شروع، عوام پریشان

اسٹاف رپورٹ

لاہور : رمضان سے پہلے کھانے پینے کی چیزیں مہنگی ہونے کے ساتھ ساتھ ان کی ذخیرہ اندوزی بھی شروع کردی گئی، سستے بازاروں میں جانے والے متوسط درجے کے شہری بھی شدید مشکل کا شکار ہیں۔

لاہور میں اروی، ٹنڈے 80، آلو 70، بھنڈی 60 روپے کلو جبکہ لہسن 100، ادرک 320، دھنيا 300، ليموں 200 روپے کلو سستے بازاروں ميں فروخت ہورہے ہيں، عام مارکيٹ ميں يہ نرخ 10 سے 20 روپے کلو زيادہ ہيں۔

پھلوں ميں آم 60 سے 150 روپے کلو، کيلا 100 سے ڈھائی سو روپے درجن، آڑو، آلو بخارہ 140 اور خوبانی 120 روپے کلو جبکہ سيب 300 روپے کلو تک بک رہا ہے، گوشت کی بات کريں تو مرغی کا گوشت 210، بکرے کا گوشت 680 اور بڑا 350 روپے کلو تک فروخت ہورہا ہے، دکانداروں نے مہنگائی کا ذمہ دار آڑھتيوں کو قرار ديا ہے۔

پنجاب حکومت نے رمضان المبارک ميں شہريوں کو ريليف دينے کيلئے 5 ارب روپے کی سبسڈی کا اعلان بھی کيا ہے۔

رمضان المبارک کی آمد ميں تو ايک ہفتہ ہی رہ گيا ہے تاہم سبزی، پھل اور گوشت عام آدمی کی پہنچ سے دور ہوتے جارہے يں جبکہ حکومت خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے۔ سماء

ODIs

آمد

city

row

Tabool ads will show in this div