پشاور: تبلیغی مرکز میں دھماکا، بچے سمیت 8 افراد جاں بحق، 65 سے زائد زخمی

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ


پشاور : پشاور کے تبلیغی مرکز میں نماز مغرب کے دوران دھماکے میں ایک بچے سمیت 8 افراد جاں بحق اور 65  سے زائد زخمی ہوگئے، کچھ افراد کی حالت تشویشناک ہے، ہلاکتوں میں مزید اضافے کا خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے، پولیس کے مطابق دھماکا ٹائم ڈیوائس کے ذریعے کیا گیا۔


پشاور میں تبلیغی جماعت کے مرکز پر شب جمعہ اجتماع کے دوران نماز مغرب کی دوسری رکعت جاری تھی کہ زور دار دھماکا ہوگیا جس کے نتیجے میں ایک بچے سمیت 8 افراد جاں بحق اور 65 سے زائد زخمی ہوگئے، زخمیوں میں بچے بھی شامل ہیں، دھماکے سے تبلیغی مرکز کے دروازے اور کھڑکیاں ٹوٹ گئیں، زخمیوں میں 10 سے زائد کی حالت تشویشناک ہے جبکہ ہلاکتوں میں اضافے کا بھی خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔


ذرائع کے مطابق جاں بحق افراد میں باپ بیٹا بھی شامل ہیں، 9 سالہ اسماعیل والد کے ساتھ شب جمعہ میں شرکت کیلئے آیا تھا۔


عینی شاہدین کے مطابق زور دار دھماکا دوران نماز ہوا، جس کے بعد دھواں پھیل گیا اور زخمیوں کی چیخ و پکار سنائی دی، واقعے میں مسجد کی چھت میں سوراخ ہوگیا۔


دھماکے کے زیادہ تر زخمیوں کو لیڈی ریڈنگ اسپتال منتقل کیا گیا، جبکہ شہر کے بڑے اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کرکے ڈاکٹر اور عملہ طلب کرلیا گیا ہے۔


اے آئی جی بم ڈسپوزل یونٹ شفت ملک کا کہنا ہے کہ ابتدائی تحقیقات میں پتہ چلا ہے کہ دھماکا خود کش نہیں بلکہ ٹائم ڈیوائس کے ذریعے کیا گیا، 5 کلو بارودی مواد گھی کے کنستر میں رکھا گیا تھا۔


وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک، وزیراطلاعات شاہ فرمان سمیت متعدد سیاسی و مذہبی رہنماؤں نے دھماکے کی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے۔


پرویز خٹک کا کہنا ہے کہ نمازیوں کو نشانہ بنانے والے انسانیت کے دشمن ہیں۔


شاہ فرمان کا کہنا ہے کہ امدادی ٹیمیں ریسکیو کاموں میں مصروف ہیں، ہر طرح سے تحقیقات کی جائے گی۔ سماء

میں

زخمی

MQM

سے

سمیت

زائد

hassan

piracy

Tabool ads will show in this div