جس دن اورنج لائن ٹرین چلے گی ہم بھی سواری کریں گے،چیف جسٹس

اورنج لائن ٹرین منصوبے کی تعمیراتی کمپنیوں نے بنک گارنٹی کا معاہدہ سپریم کورٹ میں پیش کردیا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ اورنج لائن ٹرین لاہورکے لوگوں کے لیےتحفہ ہے، جس دن ٹرين چلے گي ہميں  بھي بتائيں ہم بھي سواري کريں گے۔

چیف جسٹس کی سربراہی میں بینچ نے اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبہ کیس کی سماعت کی ۔ اس دوران تعمیراتی کمپنیوں کے وکیل نعیم بخاری نے ایک ارب کی بنیک گارنٹی کا معاہدہ پیش کیا۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیئے کہ اورنج لائن ٹرین لاہورکے شہریوں کے لیےتحفہ ہے،جس دن اورنج لائن بنے ہمیں بھی بتائیں۔ ہم بھی ٹرین  میں بیٹھیں گے۔

اورنج لائن ٹرین بالکل بند نہیں ہورہی،علیم خان

اس پر پراجیکٹ ڈائریکٹر علی سبطین نے بتایا کہ آپ کو سواری کی دعوت دی جائے گی۔ عدالت نے ہدایت کی کہ بینک گارنٹی 2 روز بعد تعمیراتی کمپنی جمع کرائے گی اورکہا کہ منصوبے کے تمام سنگ میل مقررہ تاریخ پر مکمل کیے جائیں گے۔ مقررہ تاریخ پرکام مکمل نہ ہونے کو عدالتی حکم کی عدم تعمیل سمجھا جائے گا۔

CJP

Mass Transit

Tabool ads will show in this div