زعیم قادری کی ن لیگ میں واپسی، اہلیہ نے اشارہ دے دیا

زعیم قادری کی اہلیہ نے اپنے شوہر کی نون لیگ میں واپسی کا اشارہ دے دیا ۔ سماء سے گفتگو میں کہا کہ قائد پاکستان مسلم لیگ ن شہباز شریف اگر آصف علی زرداری کے ساتھ بیٹھ سکتے ہیں تو زعیم کے ساتھ کیوں نہیں۔

سماء کے نمائندے نعیم اشرف بٹ سے خصوصی انٹرویو میں عظمیٰ قادری کا کہنا تھا کہ اگر جوتے پالش کرنے ہوتے تو آج یہ نوبت نہیں آتی ، اگر ان کے شوہر کو پارٹی میں ان کے وقار کے مطابق مقام نہیں دیا جاتا تو کوئی ان کے گھر آنے کی کوشش نہ کرے ۔

اہلیہ زعیم قادری نے کہا کلثوم نواز کے جنازے کے موقع پر پر نواز شریف زعیم کو فیملی ایریا میں لے گئے اور کہا آپ اپنی والدہ کو لحد میں اتاریں۔

متعلقہ خبر: زعیم قادری نے ن لیگ سے بغاوت کی وجہ بتادی

انہوں نے بتایا کہ نواز شریف نے فون کیا، جبکہ شہباز شریف بھی گھر آنا چاہتے تھے، شہباز شریف نے مجھے اسمبلی رکنیت کا حلف لینے کا بھی کہا۔ انہوں نے کہا کہ اسمبلی رکنیت کسی کا احسان نہیں، ہماری قربانیاں بہت زیادہ ہیں، 14ماہ کے بچے کو لے کر پارٹی کے لیے جدوجہد کرتی رہی ۔

عظمیٰ قادری کا کہنا تھا کہ حمزہ شہباز کو بڑے بھائی زعیم قادری کی عزت کرنی چاہیئے، عزت کرنی ہے تو ٹھیک، نہیں تو کوئی ہمارے گھرنہ آئے ۔

اہلیہ زعیم قادری نے بتایا مریم نواز نے فون کر کے کہا کہ امی ابو پریشان ہیں ۔

واضح رہے کہ شہباز شریف کے دور میں پنجاب حکومت کی ترجمانی کرنے والے زعیم قادری دوہزار اٹھارہ کے انتخابات میں نون لیگ سے علیحدہ ہوگئے تھے

سماء کے نمائندہ خصوصی نعیم اشرف بٹ کے مطابق زعیم قادری نے انتخابات سے پہلے بغاوت کا اعلان کیا ۔

زعیم قادری این اے133 سے ایم این اے کے امیدوار تھے، مگر حمزہ شہباز نے انہیں قومی اسمبلی کا ٹکٹ دینے سے انکار کردیا۔ حمزہ شہباز کے رویے سے دلبرداشتہ ہوکر زعیم قادری ن لیگ سے الگ ہوگئے تھے۔

انہوں نے 21 جون 2018 کو پریس کانفرنس میں علٰیحدگی کا اعلان کیا تھا۔

PML N

HAMZA SHAHBAZ

Zaeem Qadri

Tabool ads will show in this div