کراچی کی صنعتیں برائے فروخت، مالکان نے اشتہار دیدیا

اسٹاف رپورٹ

کراچی : بدامنی، گيس اور پانی کا بحران، صنعتکاروں نے بڑا فيصلہ کرليا، فيکٹرياں اور يونٹس خريد لو، کراچی کے مالکان نے اشہتار ديديا، صنعتکار کيوں فيکٹرياں فروخت کررہے ہيں يہ جانتے ہيں۔

کراچی کے صنعتکاروں نے چند برس پہلے بھی بھتے، اغواء اور امن و امان کی خراب صورتحال کے سبب فيکٹرياں فروخت کرکے سرمايہ بيرون ملک منتقل کيا تھا، جس کے بعد کراچی میں ٹارگيٹڈ آپريشن شروع ہوا، کچھ حالات بہتر تو ہوئے ليکن پھر سے امن و امان، گيس اور پانی کے بحران نے  صنعتکاروں کو بڑا فيصلہ کرنے پر مجبور کرديا

کورنگی ايسوسی ايشن آف ٹريد اينڈ انڈسٹری کے صدر راشد احمد صديقی کہتے ہيں صنعتکار پھر صنعتيں فروخت کرکے سرمایہ بنگلہ ديش اور سری لنکا منتقل کررہے ہیں۔

کورنگی ميں برائے فروخت فيکٹرياں 15 ہزار سے 60 ہزار اسکوائر فٹ تک وسیع ہیں، مزدووں کے سروں پر منڈلاتے بیروزگاری کے سائے بھی گہرے ہورہے ہیں۔

کورنگی ايسو سی ايشن کے صدر نے مطالبہ کيا کہ حکومت صنعتوں کی فروخت کا معاملہ سنجیدگی سے لے، برآمدات کا حصول مشکل میں پڑجائے گا۔ سماء

burger

Tabool ads will show in this div