یمن کشیدگی،عالمی منڈی میں تیل کی قیمت میں اضافہ

ویب ایڈیٹر:


لندن / نیویارک : سعودی عرب اور خلیجی ممالک کے اتحاد کی جانب سے یمن پر فضائی حملے کے بعد عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں پانچ فیصداضافہ ہوگیا ہے، جب کہ اس میں مزید اضافے کا بھی امکان ظاہر کیا جارہا ہے جس سے پاکستان میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا دور جلد اپنے اختتام کو پہنچ جائے گا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق سعودی عرب اور خلیجی ممالک کی جانب سے یمن کے حوثی قبائل کے خلاف فضائی حملوں سے ان ممالک میں موجود تیل کی تنصیبات کو تو نقصانات کا اندیشہ نہیں لیکن سیکیورٹی خدشات کے باعث تیل کے ذخائر میں کمی کا امکان ہے جس کی وجہ سے عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں تیزی آرہی ہے۔

یمن کی صورت حال کے بعد عالمی مارکیٹ میں برینٹ کروڈ آئل کی قیمت 1.69 ڈالر کے اضافے کے ساتھ 59.48 ڈالراور یو ایس کروڈ آئل کی قیمت 1.12 ڈالر فی بیرل کے اضافے کے بعد 52.33 پر پہنچ گئی ہے جب کہ عالمی مارکیٹ میں مجموعی اضافہ 5 سے 6 فیصد ریکارڈ کیا گیا ہے۔ اقتصادی ماہرین کا کہنا ہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں اضافہ یمن پر حملے کے فوری رد عمل کا نتیجہ ہے اور اگر یہ لڑائی طوالت اختیار کرتی ہے تو قیمتوں میں مزید اضافہ بھی ممکن ہے۔ سماء

میں

کی

identity

Tabool ads will show in this div