نوشہرہ، بچی کو زیادتی کے بعد قتل کرنے والےملزم کا اعتراف جرم

خیبر پختونخوا کے شہر نوشہرہ میں نو سالہ بچی مناہل کو زیادتی کے بعد قتل کرنے والے ملزم نے اپنے جرم کا اعتراف کر لیا۔


پولیس نے ملزم یاسر کو مردان میں دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں پیش کیا جہاں سینئر سول جج نوشہرہ کے سامنے ملزم نے 9 سالہ مناہل کے ساتھ جنسی زیادتی اور اسے قتل کرنے کے اپنے گھناؤنے  جرم کا اعتراف  کیا۔

ملزم یاسر نے عدالت کے سامنے بچی مناہل کے ساتھ جنسی زیادتی اور پھر اپنے جرم کو چھپانے کے لیے اس کے سَر اور سینے پر پتھر کے وار کرکے اسے قتل کرنے کا اعتراف کیا۔ ملزم نے بتایا کہ وہ بچی کو کپڑے دینے کے بہانے لے گیا تھا۔

نوشہرہ میں بچی کا قاتل گرفتار

ملزم یاسر نے اپنے جرم کے اعتراف کے ساتھ ہی عدالت سے اپنے کئے گئے جرم پر معافی کا مطالبہ بھی کیا۔

واضع رہے کہ 27 دسمبر کو مناہل کے لاپتہ ہونے کی رپورٹ درج کی گئی تھی اور اگلے ہی روز بچی کی لاش قریبی قبرستان سے برآمد ہوئی جس کے بعد پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے ملزم یاسر کو گرفتار کیا تھا۔

Noshehra

Police arrested

Tabool ads will show in this div