خاتون پرنسپل کو قيد کرنے کا ڈراپ سين سامنے آگیا

اسسٹنٹ کمشنر کے مطابق خاتون پرنسپل کے ٹرانسفر آرڈر آچکے تھے جس کے بعد وہ رکشے ميں سرکاري دستاويز رکھ کر لےجارہي تھيں جس پر انہيں روکا گيا۔

اس سے قبل پنڈ دادن خان گورنمنٹ کالج فار ویمن کی پرنسپل کا الزام نے الزام عائد کیا تھا کہ اسٹاف نے نئی پرنسپل  کے ساتھ مل کرمجھے اورمیرے بیٹے کو ساری رات قید رکھا۔ جب کہ نو تعینات پرنسپل سعدیہ نے قید کرنے کے الزام کو یکسر مسترد کردیا۔

اسسٹنٹ کمشنر کا کہنا تھا کہ کسي کو قيد نہيں کيا بلکہ پوليس بھي يہاں ہي تھي،جب کہ محمکہ کے جانب سے ٹرانسفرليٹرآيا اس کے بعد کسي کو دستاويزات ساتھ لےجانے کي اجازت نہيں ۔

 پولیس نے بھی اسسٹنٹ کمشنر کے بیان کی تصدیق کرتے ہوئے پرنسپل راحیلہ کے قید میں رکھنے جانے کے الزام کو جھوٹا قرار دے دیا۔

HARRASMENT

Principle

jehlam

pind dad khan

Tabool ads will show in this div