زاویے میں زندگی کے زاویے بیان کرنیوالے اشفاق کو گزرے7سال بیت گئے

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ
کراچی: اُردو ادب کو نئی جہتوں سے روشناس کرانے والے ممتاز افسانہ نویس ، ڈرامہ نگار اور دانشور اشفاق احمد کو ہم سے جدا ہوئے سات برس بیت گئے ہیں۔
 
مشکل سے مشکل بات انتہائی شگفتہ انداز میں کرنے والے اشفاق احمد بائیس اگست انیس سو پچیس کو لاہور میں پیدا ہوئے۔ گورنمنٹ کالج لاہور سے ایم اے کے بعد روم یونیورسٹی اور گرے نوبل یونیورسٹی فرانس سے اطالوی اور فرانسیسی زبان میں ڈپلومے حاصل کیے۔
نیویارک یونیورسٹی سے براڈکاسٹنگ کی خصوصی تربیت بھی حاصل کی ۔۔۔ وطن واپسی پر ادبی مجلہ ''داستان گو'' جاری کیا۔ انیس سو تریپن میں شائع ہونے والے افسانے ''گڈریا '' نے ان کی شہرت کو چارچاند لگا دیے۔

اشفاق احمد کو منٹو کے بعد اردو کا بہترین افسانہ نگار مانا گیا۔ انیس سو پینسٹھ میں انہوں نے ریڈیو پاکستان لاہور سے طنزومزاح سے بھرپور ہفتہ وار پروگرام تلقین شاہ شروع کیا، جو 30 سال سے زائد عرصہ تک نشر ہوا۔
 اشفاق احمد کو صدارتی تمغہ برائے حُسن کارکردگی اور ستارہ امتیاز سے بھی نوازا گیا۔ اشفاق احمد سات ستمبر دو ہزار چار کو اس جہان فانی سے کوچ کر گئے، لیکن ان کا کام ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔ سماء اسپیشل رپورٹ

میں

کے

Vidya Balan

کو

گئے

بیان

Tabool ads will show in this div