ہمسايہ ملکوں سے بہتر تعلقات خارجہ پاليسی کا محور ہے، وزیر خارجہ

Nov 29, 2018

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/11/Shah-Mehmood-100-Days-Sot-29-11.mp4"][/video]

وزیر خارجہ کہتے مجھے پاکستان کی وکالت کی ذمہ داری تفویض کی گئی، ہم نے دفتر خارجہ کو مضبوط اور مؤثر بنانے کا فیصلہ کیا، ہمسايہ ملکوں سے بہتر تعلقات خارجہ پاليسی کا محور ہے، ٹرمپ کے بيان پر عمران خان نے بھرپور جواب ديا، مسلمانوں کے جذبات سے ہالينڈ حکومت کو آگاہ کيا، خطے میں امن ہماری ضرورت ہے، بھارت کو بھی گفت و شنید کی دعوت دی۔

پی ٹی آئی حکومت کے 100 دن کی کارکردگی سے متعلق تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ سابقہ حکومت نے 4 سال تک وزیر خارجہ مقرر نہیں کیا اور پڑوسی ملک کے ایجنڈے کو تقویت دینے میں کردار ادا کیا، دشمن نے پاکستان کو دنیا بھر میں تنہا کرنے کی کوشش کی۔

مزید جانیے : حکومت کے 100 دن: تمام منصوبے غریبوں کو اوپر لانے کیلئے ہیں، وزیراعظم

انہوں نے مزید کہا کہ مجھے پاکستان کی وکالت کی ذمہ داری تفویض کی گئی، ہم نے دفتر خارجہ کو مضبوط اور مؤثر بنانے جبکہ دیگر ممالک سے تعلقات میں بہتری لانے کا فیصلہ کیا ہے، جس کیلئے خارجہ پالیسی ماہرین پر مشتمل ایک کمیٹی قائم کریں گے، وزیراعظم کی ہدایت کی روشنی میں خارجہ پالیسی بنالی، 100 روز کے دوران 16 دو طرفہ ملاقاتیں کرچکے ہیں۔

شاہ محمود کا کہنا ہے کہ ہماری اولین ترجیح پڑوسی ممالک کے ساتھ تعلقات کی بہتری ہے، خطے میں امن ہماری ضرورت ہے، بھارت کو بھی گفت و شنید کی دعوت دی، چين پاکستان کا آزمايا ہوا دوست ہے، بعض عناصر ايران کے ساتھ تعلقات خراب کرنا چاہتے تھے۔

یہ بھی پڑھیں : قوم کی بہتری کیلئے یوٹرن لینا پڑا تو ضرور لیں گے، اسد عمر

وہ کہتے ہیں کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے بيان پر وزیراعظم عمران خان نے بھرپور جواب ديا، مسلمانوں کے جذبات سے ہالينڈ حکومت کو آگاہ کيا، حکومت کے 100 روز کے دوران دفتر خارجہ  19 معاہدے دستخط کرچکا ہے۔

PTI

FO

100Days

Tabool ads will show in this div