مایوس ہوگئے،بلوچستان کی اہمیت،دھمکی دینے کا نوٹس

بلوچستان ہائیکورٹ میں بار ایسوسی ایشن کے سالانہ انتخابات میں تاخیر کے خلاف دائر درخواست کی سماعت ہوئی

رپورٹ:سما ڈیجیٹل

سماعت بلوچستان ہائی کورٹ کی چیف جسٹس جسٹس طاہرہ صفدر اور جسٹس اعجاز سواتی پر مشتمل دو رکنی بنچ نے کی سماعت میں درخواست گزار نصیب اللہ ترین ایڈووکیٹ  ثناء اللہ بابیکئی ایڈووکیٹ، علی احمد کاکڑ ایڈووکیٹ اورمنیر احمد کاکڑ ایڈووکیٹ پیش دوران سماعت درخواست گزار وکلاء کی جانب سے درخواست کی گئی کہ بلوچستان ہائیکورٹ بار کے اختیارات بلوچستان بار کونسل کو منتقل کئے جائیں ، چیف جسٹس جسٹس طاہرہ صفدر نے ریمارکس دئیے کہ فریقین مل بیٹھ کر درمیانی راستہ نکالنے کی کوشش کریں اس پر درخواست گزار وکلاء نےکہا کہ کئی بار بات چیت کرنے کی کوشش کی مگر مثبت جواب نہیں ملا،منیر احمد کاکڑ ایڈووکیٹ نے عدالت کو مزید بتایا کہ بلوچستان بار کونسل کی جانب سے جواب آئندہ سماعت پر جمع کروایا جائے گا عدالت نے کیس کی مزید سماعت 4 دسمبر تک ملتوی کر دی۔​

بلوچستان ہائی کورٹ نے غیر ملکی شہریت کے الزام میں علی احمد کوہزاد کی معطلی پر وفاق سے دس روز میں جواب طلب کر لیا۔

رپورٹ:محمد عاطف،کوئٹہ

غیر ملکی شہریت پر نااہل قرار دئیے جانے والے ہزارہ ڈٰیمو کریٹک پارٹی کے سابق ایم پی اے علی احمد کوہزاد کی اپیل پر سماعت بلوچستان ہائیکورٹ کے چیف جسٹس جسٹس طاہرہ صفدر اور جسٹس اعجاز سواتی پر مشتمل دو رکنی بنچ نے کی ، جس میں علی احمد کوہزاد کے وکیل ظہور احمد ایڈووکیٹ اور وفاقی کی جانب سے ڈپٹی اٹارنی جنرل عبداللہ جان کاکڑ پیش ہوئے، دوران سماعت علی احمد کوہزاد کے وکیل نے کہا کہ ان کے موکل چار مرتبہ الیکشن میں حصہ لے چکے ہیں لیکن جب جیتے تو انہیں غیر ملکی قرار دیکر نا اہل کر دیا گیا ، علی احمد کوہزاد کے وکیل نے درخواست کی کہ 24 اکتوبر کا فیصلہ معطل کیا جائے جس پر جسٹس اعجاز سواتی نے استفسار کیا کہ یہ فیصلہ الیکشن کمیشن کے نوٹی فکیشن کو متاثر تو نہیں کرے گا جس پر درخواست گزار کے وکیل نے کہا کہ وہ الیکشن کمیشن نہیں بلکہ وفاقی وزارت داخلہ کے فیصلے کو چیلنج کر رہے ہیں عدالت نے اہلی پر وفاق سے دس روز میں جواب طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کر دی۔

سابق صوبائی وزیر سخی امان اللہ نوتیزی بلوچستان عوامی پارٹی سے مایوس ہوگئے

رپورٹ:ایم بی بلوچ،چاغی

سابق صوبائی وزیر سخی امان اللہ خان نوتیزی نے اپنے بیان میں کہا کہ بلوچستان عوامی پارٹی کو بنانے میں بہت محنت کی اور انتہائی کم وقت میں پارٹی کو وہ مقام دیا جو کسی اور پارٹی کو نہیں ملا مگر افسوس کہ پارٹی کو صرف جام کمال نے اپنا ذاتی جاگیر سمجھ کر پارٹی کو یرغمال بنایا ہے اور اپنے مرضی کے فیصلے کرکے پارٹی کو تقسیم در تقسیم کا شکار کیا۔ انہوں نے کہا کہ جن لوگوں نے پارٹی بنانے میں اہم کردار ادا کیا یا گزشتہ الیکشن میں بیس سے پچیس ہزار ووٹ حاصل کیے انکو جام کمال نے دیوار سے لگا کر ایسے لوگوں کو آگے لایا جن کا پارٹی میں کوئی رول ہی نہیں تھا اسی لئے بلوچستان عوامی پارٹی کے سرکردہ رہنما دلبرداشتہ ہوکر پارٹی سے استعفیٰ دے رہے ہیں انہوں نے کہا کہ عنقریب اپنے دوست و احباب کی مشاورت سے پریس کانفرنس کے ذریعے باپ پارٹی سے مستعفی ہوکر کسی سیاسی پارٹی میں جانے کا اعلان کروں گا۔

وفاق میں پہلی مرتبہ بلوچستان کو اہمیت دی جا رہی ہے،رامین محمد حسنی

رپورٹ:سما ڈیجیٹل

وزیراعلی بلوچستان کے معاون خصوصی سردار زادہ میر رامین جان محمد حسنی نے کہا ہے کہ پہلی مرتبہ وفاق میں بلوچستان حکومت کو اہمیت دی جا رہی ہے اور سی پیک سمیت بیرونی ممالک کے جتنے بھی سرمایہ کاری صوبے میں ہورہی ہیں ان میں اعتماد میں لیا جا رہا ہے، وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کی قیادت میں بلوچستان میں ترقی کا ایک نیا دور شروع ہونے والا ہے ہمارا صوبہ مالی وسائل سے مالامال ہے اور مالی مشکلات کو کم کرنے کے لیے صوبائی حکومت وفاق سے مل کر اقدامات اٹھا رہی ہے اور جلد صوبے کو مالی مشکلات سے نکال لیں گے سابق حکومت کی بدنظمی کی وجہ سے ترقیاتی کام مکمل نہ ہوسکے اور صوبہ مشکلات سے دوچار ہوگیا تھا اب پی ایس ڈی پی کا ازسرنو جائزہ لیا جا رہا ہے اور پی ایس ڈی پی میں ان منصوبوں کو ترجیح دی جارہی ہے جس کا براہ راست فائدہ عوام کو ملے گا بوگس ملازمین کرپشن سمیت کئی مسائل ورثے میں ملے ہیں ،نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ صوبے میں ترقیاتی کاموں کا جال بچھائیں گے اور خاص طورپرپانی کے پینے اور ڈیموں پر خصوصی توجہ دی جائے گی ۔

ہرنائی میں دو قبائل کا سوشل میڈیا میں دھمکی دینے کا نوٹس لے لیا

رپورٹ:سما ڈیجیٹل

ڈپٹی کمشنر عظیم جان دمڑ کا عبدلانی اور میڑیزئی قبائل کے درمیان سوشل میڈیا پر چلینج دینے کا خبر چلنے کا ڈی سی عظیم جان دمڑ نے نوٹس لے لیا اور دونوں قبائل سے رابطہ کرکے مسئلہ کو جنگ کے بجائے مل بیٹھ کر حل کرنے پر زور دیا،دونوں قبائل کے سربراہوں نے ڈپٹی کمشنر عظیم جان دمڑ کی اپیل پر چلینج کا فیصلہ واپس لیتے ہوئے مسئلہ کو مل بیٹھ کر قبائل جرگہ کے زریعے حل کرنے کی یقین دہانی ڈپٹی کمشنر عظیم جان دمڑ نے دونوں قبائل کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہاکہ مذکورہ قبائل نے ہمیشہ انتظامیہ سے تعاون کیا ہے اور امید ہے کہ مذکورہ مسئلے کو بھی وہ مل بیٹھ کر حل کرینگے ہرنائی کے مختلف قبائل کی جانب سے ڈپٹی کمشنر عظیم جان دمڑ کی جانب سے سوشل میڈیا پر خبر چلنے کا نوٹس لیتے ہوئے دونوں قبائل کو کے درمیان تصادم رکنے میں اہم کردار ادا کرنے پر ان کا شکریہ ادا کیا۔

 

CHAGHI

HARNAI

BAP

Tabool ads will show in this div