کیس کیس ہوتا ہے،مقدمہ ہائی یا لو پروفائل نہیں،چیف جسٹس

Nov 21, 2018

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/11/FW-CJP-At-UK-Sot-20-11.mp4"][/video]

چیف جسٹس ثاقب نثار کا کہنا ہے کہ عدليہ پر دباؤ کا کوئي سوچ بھي نہيں سکتا، ہر کیس کو کیس کی طرح لیتے ہیں، کیس کیس ہوتا ہے،کوئی مقدمہ ہائی یا لو پروفائل نہیں ہوتا۔

لندن آمد پر میڈیا سے گفت گو میں چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار کا کہنا تھا کہ پاکستان میں انصاف کا ایک ہی نظام ہے، میرا پہلا فرض عدلیہ میں اصلاحات کرنا ہے، میرے نزدیک کیس کیس ہوتا ہے، کوئی مقدمہ ہائی یا لوپروفائل نہیں۔

 

چیف جسٹس کا مزید کہنا تھا کہ عدلیہ پر دباؤ کی بات کسی زمانے میں ہوگی، آج ایسا نہیں، پاکستان میں ایک ہی جسٹس سسٹم ہے۔

 

واضح رہے کہ چیف جسٹس ان دنوں برطانیہ میں موجود ہیں، جہاں وہ 28 نومبر تک قیام کریں گے۔ جسٹَس ثاقب نثار لندن، برمنگھم اور مانچسٹر ميں ڈيم فنڈ ريزنگ تقاريب ميں شرکت کريں گے، جب کہ لندن کے ہوٹل میں آج پہلی فنڈ ریزنگ تقریب ہوگی۔

 

تقریب سمندر پار پاکستانیوں کی جانب سے منعقد کی گئی ہے۔ چیف جسٹس پاکستانی وقت کے مطابق رات 10 بجے خطاب کرینگے۔

CHIEF JUSTICE

fund raising

Saqib Nisar

Tabool ads will show in this div