داخلوں پر پابندی مگر رینکنگ میں اوپر، سندھ سرکار کا انوکھا کارنامہ

سندھ ہائر ایجوکیشن کمیشن نے نے انوکھی رینکنگ جاری کردی ہے جس کے تحت ٹاپ 10 میں شامل 2 یونیورسٹیوں پر وفاقی ایچ ای سی نے داخلوں پر پابندی لگادی ہے۔

وفاقی ہائر ایجوکیشن کمیشن نے کراچی کی 2 نجی اداوں  علماء یونیورسٹی اور دادا بھائی انسٹیٹیوٹ میں داخلوں پر پابندی عائد کردی ہے جس کے تحت طلبہ دونوں اداروں میں ایڈمیشن نہیں لے سکتے۔ بصورت دیگر ایڈمیشن اور ڈگری غیرقانونی قرار دی جائے گی۔

دوسری جانب سندھ ہائیر ایجوکیشن کمیشن نے سندھ بھر کی نجی جامعات اور انسٹیٹیوشنز کی رینکنگ جاری کردی ہے جس میں قواعد و ضوابط کو نظر انداز کرتے ہوئے دادا بھائی انسٹیٹیوٹ کو ساتویں اور علماء یونیورسٹی کو آٹھویں درجے پر رکھا گیا ہے۔

رینکنگ دینے سے پہلے جامعات کے تمام پہلووں کا جائزہ لینا ضروری ہوتا ہے۔ اس درجہ بندی کے بعد سوال اٹھتا ہے کہ مذکورہ ادارے اتنے ہی بہتر ہیں تو وفاقی ایجوکیشن کمیشن نے ان میں داخلوں پر پابندی کیوں عائد کر رکھی ہے۔

سندھ ہائر ایجوکیشن کمیشن کا بغیر کسی جائزے کے رینکنگ جاری کرنا انتظامیہ کی کارکردگی پر سوالیہ نشان تو ہے مگر درجہ بندی کا عمل بھی مشکوک ہوگیا ہے۔

hec

Tabool ads will show in this div