لاہوری نوجوان کا وائلن پرپہلا تحقيقی مقالہ

اسٹاف رپورٹ

لاہور: فن گائيکي کے حوالے سے پاکستاني دھرتي بڑي ذرخيز ہے ۔۔۔ مگراب لاہور کے ايک نوجوان موسيقارغلام علي لاہوتي نے وائلن پرپہلا تحقيقي مقالہ لکھ کر نئي تاريخ رقم کردي۔

گورنمنٹ کالج يونيورسٹي ميں ايم اے کے طالبعلم غلام علي لاہوتي نے وائلن پر مقالہ لکھا کرريکارڈ قائم کر ديا ،،،لاہوتي نے  پاکستان کا پہلا وائلن میوزک سکول بھي بنا رکھا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ پاپ ميوزک  کے فروغ سے پاکستان ميں روايتي مشرقي موسيقي نظراندازہوئي ہے۔

غلام علي لاہوتي انيس سو چھيانوے ميں آل پاکستان ميوزک کانفرنس ميں بہترين کارکردگي پر گولڈ ميڈل بھي حاصل کر چکے ہيں ،،،، انيس سو اٹھانوے ميں گورنمنٹ يونيورسٹي کا رول آف آنر حاصل کيا ،،،،  غلام علي نے اپنے ہي نام سے وائلن بينڈ بھي بنا رکھا ہے۔ 

غلام علي لاہوتي کا کہنا ہے کہ انہوں نے اپنا وائلن سکول بھي بنايا ہے تاکہ وائلن آرٹ کو آگے بڑھايا جاسکے۔ انہيں يہ اعزاز بھي حاصل ہے کہ گورنمنٹ کالج يونيورسٹي ميں بطور وائلنسٹ ان کي تصوير بھي آويزاں ہے۔

غلام علي لاہوتي کا کہنا ہے کہ وہ وائلن پرريسرچ جاري رکھيں گے اوراس مغربي سازکو پاکستان ميں مقبول بنانے کي بھرپورکوشش کريں گے۔ سماء

کا

bajaur

Tabool ads will show in this div