طوفان اور آندھی ، امراض قلب میں مبتلا افراد کیلئے جان لیوا

Nov 13, 2018

طبی ماہرین نے ایک نئی تحقیق میں کہا ہے کہ ایسے افراد جو دل کے عارضے کا شکار ہوں طوفان اور آندھی ان کے لیے جان لیوا ہوسکتی ہے۔

سویڈن میں کی گئی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ اگرچہ سرد موسم امراض قلب کے مریضوں کے لیے مفید ہوسکتا ہے کیونکہ ٹھنڈ دل کی دھڑکن کے تناسب میں اضافہ کرتی ہے اور فشار خون بلند ہوتا ہے۔ 1970ء کے بعد سے عمومی طور پر یہ خیال کیا جاتا تھا کہ سردی کا موسم دل کے مریضوں کے لیے گرمیوں سے بہتر ہوتا ہے تاہم اب اس تخیل میں تبدیلی آئی ہے ۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ سرد موسم، آندھی اور طوفان دل کے مریضوں کے لیے نقصان دہ ہی نہیں بلکہ جان لیوا بھی ہوسکتا ہے۔

سویڈن کی لونڈ یونی ورسٹی کے زیراہتمام 2 لاکھ 74 ہزار ایسے افراد کی زندگی کا مطالعہ کیا گیا جو دل کے امراض کا شکار تھے۔ 1998ء سے 2013ء تک جاری رہنے والے اس مطالعے میں موسمی تبدیلی کے دل کی دھڑکن پر اثرات کا جائزہ لیا گیا۔

جب ہوا کی رفتار 36 میل فی گھنٹہ کی رفتار سے چلتی ہے تو دل کی دھڑکن کا تناسب 7 فی صد بڑھ جاتا ہے۔اسی طرح جب درجہ حرارت نقطہ انجماد تک پہنچ جاتا ہے، دل کی دھڑکن 14 فی صد بڑھ جاتی ہے اور دل عارضہ قلب کے شکار ہونے کے خطرات 13 فیصد بڑھ جاتے ہیں۔

 

HEALTH

heart patient

Tabool ads will show in this div