پاکستانیوں کے بیرون ملک 96 ہزار خفیہ اکاؤنٹس ڈھونڈ لئے، حکومت کا دعویٰ

حکومت نے بیرون ملک پاکستانیوں کے مزید 96 ہزار خفیہ اکاؤنٹس کا سراغ لگانے کا دعویٰ کرديا، پاناما لیکس میں شامل 444 شہریوں میں سے 150 تاحال نامعلوم قرار دیئے گئے ہیں۔

پاکستانیوں کے بیرون ملک مزید 96 ہزار خفیہ اکاونٹس کا سراغ لگایا جاچکا، قومی اسمبلی کے گرما گرم اجلاس میں وزیر مملکت برائے ریونیو حماد اظہر نے تہلکہ خیز انکشاف کردیا۔

وقفہ سوالات میں مزید بتایا کہ لیگی دور حکومت میں پاناما لیکس میں شامل جن  242 افراد کیخلاف کارروائی سے گریز کیا گیا، تبدیلی سرکار نے انہیں بھی نشانے پر رکھا ہوا ہے۔

وزیر خزانہ نے ایوان کو تحریری جواب میں بتایا کہ بیرون ملک پاکستانیوں کے خفیہ اکاؤنٹس پر ایف بی آر کڑی نظر رکھے ہوئے ہے، نئے ٹیکس قوانین کا اطلاق سوئس اکاؤنٹس پر بھی ہوگا، جبکہ پاناما لیکس میں شامل 444 پاکستانیوں میں سے 150 کا کوئی سراغ ہی نہیں ملا، 12 وفات پاچکے جبکہ 4 نے پاکستانی شہریت ترک کردی۔

یہ بھی بتایا گیا کہ  10 ارب 90 کروڑ روپے کی کرپشن کے 15 کیس حتمی مرحلے میں پہنچ گئے، 6 ارب 20 کروڑ روپے کی وصولیاں کی بھی جاچکی ہیں۔

وقفہ سوالات میں ن لیگ کے محسن شاہنواز رانجھا نے پوچھا کہ علیمہ خان کی بیرون ملک جائیداد کے حوالے سے کیا اقدامات کئے گئے؟، جس پر وزیر ریونیو نے کہا مجھ سمیت کوئی بھی شخص ہو، جس کا بھی نام آیا، کارروائی ہوگی۔

PTI

NATIONAL ASSEMBLY

Panama

Tabool ads will show in this div