جنرل ریٹائرڈ حمید گل کے بیٹے عبداللہ گل قاتلانہ حملے میں محفوظ رہے

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/11/BPR-Abdullah-Gul.mp4"][/video]

جنرل ریٹائرڈ حمید گل کے بیٹے عبداللہ گل قاتلانہ حملے میں محفوظ رہے۔ نامعلوم حملہ آور فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔

سماء سے بات کرتے ہوئےعبداللہ گل نے بتایا کہ وہ اسلام آباد سے اپنی جیپ میں آرہے تھے۔ راول پنڈی میں پرانے ائیرپورٹ کے قریب انھیں پچھلی جانب سے آنے والی دو گاڑیاں نظر آئیں، انھوں نے حملہ آوروں کےعزائم پہلے ہی بھانپ لئے تھے اور انھیں ہتھیار بھی نظر آگئے تھے۔

عبداللہ گل نے فوری طور پر اپنی جیپ درمیان والی سڑک پر گاڑی ڈال دی اور دوسری سڑک پر آگئے جو ون وے تھی۔ اس مقام پر حملہ آوروں نے ان پر سات 8 فائر آگئے۔ اس کے بعد حملہ آور اس لئے تعاقب نہ کرسکے کیوں کہ وہ  گاڑیوں پر تھے اور عبداللہ گل جیپ میں سوار تھے۔

عبداللہ گل نے بتایا کہ انھیں پہلے بھی دھمکیاں مل چکی تھی۔ وہ دفاع پاکستان کونسل اور ملی یکجہتی کونسل پاکستان کے رہنما بھی ہیں۔ انھوں نے موصول ہونے والی دھمکیوں سے متعلق ہوم ڈپارٹمنٹ پنجاب اور وزارت داخلہ کو بھی آگاہ کیا تھا۔

Abdullah Gul

hameed gul

Tabool ads will show in this div