اٹک میں قاری نے 10 سالہ شاگرد کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

اٹک کے علاقہ فورملی میں مدرسے کے استاد نے اپنے 10 سالہ شاگرد کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ پولیس نے مقدمہ درج کرکے قاری کو گرفتار کرلیا ہے۔

اٹک سے سماء کے نمائندی فاروق بخاری کے مطابق واقعہ ضلع اٹک کی تحصیل حضرو کے علاقہ فورملی میں پیش آیا ہے۔

متاثرہ بچے کی والدہ نے پولیس کو بیان دیتے ہوئے میرا بیٹا اسکول میں تیسری جماعت کا طالب علم ہے اور اسکول کے بعد محلے کی مسجد کی دوسری منزل پر قائم مدرسے میں قرآن پڑھنے جاتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: خیرپور میں تین ملزمان نے بچے کو زیادتی کا نشانہ بناکر ویڈیو انٹرنیٹ پر اپ لوڈ کردی

گزشتہ روز بچہ مدرسے میں پڑھنے گیا اور واپس روتے ہوئے آگیا۔ جب بچے سے پوچھا تو اس نے بتایا کہ قاری تنویر نے اس کے ساتھ بد فعلی کی ہے۔ بچے کی شکایت پر جب والدہ مسجد پہنچی تو قاری تنویر نے پہلے انہیں ڈرایا دھمکایا اور بعد ازاں منت سماجت کرکے خاموش رہنے کی درخواست کرنے لگا۔

بچے کی تکلیف کو دیکھ کر جب والدہ اس کو لے کر اسپتال گئی تو ڈاکٹر نے ٹیسٹ کرنے کے بعد بچے کے ساتھ زیادتی کی تصدیق کردی۔

پولیس نے میڈیکل رپورٹ کی بنیاد پر قاری تنویر کو گرفتار کرکے بچے کی والدہ کی مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا ہے  جس میں زیادتی، غیر فطری جنسی تعلق اور اغوا برائے بدفعلی کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔

ATTOCK

MOLVI

BOY

Tabool ads will show in this div