پاکستان میں پولیو کے 6نئے کیسز سامنے آگئے

پولیو وائرس پاکستان سے اب بھی ختم نہ ہوسکا۔حکومتی کوششوں اور انسداد پولیو مہمات کے باوجود اس سال بھی چھ نئے کیسز سامنے آ گئے۔ وزیراعظم نے ملک کو بہت جلد پولیو وائرس سے پاک کرنے کےعزم کا اظہار کردیا۔

پولیو کے خاتمے کے عالمی دن پر وزیراعظم  نے اپنے پیغام میں کہاہےکہ ملک سے پولیو کا خاتمہ اولین ترجیح ہے۔ وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان کو پولیو سے پاک کرنے کا عزم کررکھا ہے اور اس حوالے سے مجھے خود پر اور عوام پر اعتماد ہے۔

اس کےعلاوہ پاکستان میں چھ نئے کیس سامنے آ گئے ہیں ۔ وزیراعظم کے فوکل پرسن برائے انسداد پولیو نےکہاہےکہ  وائرس کیخلاف جنگ میں تین علاقے نشانے پر رکھ لیے ہیں ۔ بابر عطا نےبتایاکہ  کراچی میں بھی گڈاپ یونین نمبر چار کے علاقے اور بلوچستان میں پاک افغانستان بارڈر چمن میں اگرچار اچھی مہمات چلا لیں تو اگلے سال موسم سرما تک یہاں سے پولیو کا خاتمہ ہوجائےگا۔

بابر عطاء نےمزید بتایاکہ  ویکسینشن ٹیموں کی سیکیورٹی یقینی بنانے پر زور دیاگیاہے۔عمر بھر کیلئے معذور کردینے والے وائرس کا واحد علاج ویکسینیشن ہے اور یہ بات بچوں کو بچاؤ کے قطرے نہ پلانے والے والدین کوسمجھنا ہوگا۔

world polio day

polio cases in pakistan

Tabool ads will show in this div