اتنی نفرت کہاں لیکرجائیں گے؟ سجل علی نے کھل کراحدرضامیرکی حمایت کردی

احد رضا میراورسجل علی کے درمیان خاصی گہری دوستی ہے اور دونوں اکثر سماجی تقریبات میں ایک ساتھ دیکھے جاتے ہیں۔سدا بہارگیتوں کو نئے انداز میں پیش کرنے والے کوک اسٹوڈیو کے سیزن 11 میں اداکار احد رضامیر نے مومنہ مستحسن کے ساتھ ''کوکو کورینا'' گا کر ڈیبیو کیا۔ پاکستان فلم انڈسٹری کی گولڈن وائس کہلانے والے احمد رشدی کے اس معروف گیت کا ری میک بہت کم لوگوں کے دل میں جگہ بنا پایا۔

اداکاری میں تو احدرضا میرکو پسندیدگی کی سند مل چکی ہے لیکن اس گانے میں گلوکاری کو ان کے بس سے باہر سمجھا گیا۔ احد اور مومنہ کی گائیکی کو لیکر سوشل میڈیا پر تنقید کے ڈونگرے برسے تو قریبی دوست اداکارہ سجل علی سے رہا نہ گیا اورانہوں نے کھل کراحد کی حمایت کردی۔

مزید پڑھیے: کوک اسٹوڈیو میں کوکورینا کا حشرنشر

ٹوئٹر پراس گانے کے حوالے سے تنقید کے ساتھ ساتھ مزاح کے تڑکے کے ساتھ بھی تنقید کی گئی جو سجل علی کو ایک آنکھ نہ بھائی۔ انسٹا گرام پر سجل علی  نے اپنی پوسٹ میں لکھا کہ'' کوکوکورینا کو پسند ناپسند کرنا آپکی اپنی خواہش ہے لیکن کسی کی کوشش کو اسطرح سے شہربھر میں بےعزت نہ کریں۔ یہ ایک گانا ہے چاہیں تو چینل تبدیل کرلیں لیکن ہمارے ملک میں اس سے زیادہ اہم مسائل زیر بحث ہیں، نفرت نہ پھیلائیں''۔

انسٹا پرہی ایک اور پوسٹ میں سجل نے لکھا کہ خدا کا خوف کریں۔ اتنی نفرت لے کر کہاں جائیں گے؟ قبرمیں؟۔

اسی پر اکتفا نہیں ، سجل نے سچی دوستی کا مظاہرہ کرتےہوئے ٹوئٹر پر بھی اپنے جذبات کا اظہار کیا اور وہاں بھی اتنی نفرت کے ساتھ قبر میں جانے کا سوال اٹھا دیا۔

ایک اور ٹویٹ میں سجل نے کہا کہ ایک دوسرے کی خوبیاں اجاگر کرنے کے بجائے ہم ایک دوسرے کو نیچا دکھانے کا کوئی موقع ہاتھ سے نہیں جانے دیتے۔ ہم نئے پاکستان میں نئی سوچ کیوں نہیں لاتے؟نفرت نہیں محبت پھیلائیں۔

سوشل میڈیا صارفین نے اپنے تبصروں میں سجل کو بخوبی اس بات کا احساس دلایا کہ یہ نفرت نہیں، نہ ہی احد یا مومنہ کے ساتھ کوئی ذاتی پرخاش ہے بلکہ اتنے کلاسک گانے کو اسطرح سے گانے پر انہیں تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ کام پر تنقید کی گئی ہے نہ کہ کسی کی ذات سے نفرت۔

مزید پڑھیے: عادل مراد نے والد کے پرستاروں سے معافی مانگ لی

یاد رہے کہ بھونڈے انداز میں بنائے گئے ری میک کو ریلیز کے بعد مختلف حلقوں کی جانب سے تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ بات اس نہج ہر پہنچ گئی کہ وحید مراد کے صاحبزادے عادل مراد نے گانے کا ری میک بنانے کی اجازت دینے پراپنے مرحوم والد کے مداحوں سے معافی مانگتے ہوئے کہا کہ مکھلے دل کے ساتھ وحید مراد کے تمام پرستاروں سے معافی مانگتا ہوں یا مجھے یوں کہنا چاہیئے کہ اس کلاسک گانے کو بربادکردیا گیا۔ میں نے کوک اسٹوڈیو پر اعتماد کیا لیکن شاید اب سے مکمل طور پر احمق چلا رہے ہیں۔

مزید پڑھیے: مومنہ مستحسن اور شیریں مزاری کے درمیان نوک جھونک

اس کے علاوہ گلوکارزوہیب حسن اور وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق شیریں مزاری نے بھی ناپسندیدگی کااظہار کیا

سال 1966 میں فلم ''ارمان'' کے لیے چاکلیٹی ہیرو وحیدمراد پرفلمائے گئے مشہور ترین گانے' کوکوکورینا'' کی موسیقی سہیل رانا نے ترتیب دی تھی، اس گانے کو پاکستان فلم انڈسٹری کا پہلا پاپ سانگ بھی کہا جاتاہے۔

 

Coke Studio

sajal ali

Ahad Raza Mir

#KoKoKorina

Tabool ads will show in this div