کراچی کی 2 اور خیبرپختونخوا کی 1 نشست پر ضمنی انتخاب، ووٹوں کی گنتی جاری

خیبر پختونخوا کے حلقہ پی کے 71 اور کراچی کی دو نشستوں این اے 247 اور پی ایس 111 پر ضمنی انتخاب کے لئے پولنگ کا وقت ختم ہوگیا ۔   کراچی میں پی ٹی آئی کو ایم کیوایم اور پیپلزپارٹی، جب کہ پشاور میں متحدہ اپوزیشن سے سخت چیلنج کا سامنا ہے، ووٹوں کی گنتی جاری ہے۔ 

خیبر پختونخوا میں گورنر شاہ فرمان کی چھوڑی ہوئی نشست پی کے 71 پر آج 21 اکتوبر بروز اتوار کو ضمنی انتخاب ہوا ہے، پی ٹی آئی کے امیدوار ذوالفقار اور اے این پی کے صلاح الدین کے مابین کانٹے کا مقابلہ ہوا ہے۔ اے این پی کے امیدوار صلاح الدین کو دیگر اپوزیشن جماعتوں کی حمایت بھی حاصل ہے، دونوں جماعتیں اپنے امیدواروں کی کامیابی کیلئے پر امید ہیں۔

پی کے 71 میں کل رجسٹرڈ ووٹرز کی تعداد 132426 ہے، جس میں مرد ووٹرز کی تعداد 79276 اور خواتین ووٹرز کی تعداد 53150 ہے۔

دوسری جانب کراچی میں صدر مملکت عارف علوی اور گورنر عمران اسماعیل کی چھوڑی نشستوں پر ضمنی الیکشن بھی آج اتوار کو ہوا ہے۔ قومی اسمبلی کا حلقہ این اے 247 ڈیفنس، کلفٹن، اولڈ سٹی ایریا اور پنجاب کالونی سمیت مختلف علاقوں پر مشتمل ہے، جب کہ صوبائی اسمبلی کا حلقہ پی ایس 111 بھی اسی حلقے کی حدود میں محدود ہے۔

قومی اسمبلی کی نشست پر 12 امیدواروں کے درمیان مقابلہ ہوا، پی ٹی آئی کی جانب سے آفتاب حسین صدیقی، پیپلز پارٹی کی جانب سے معروف اداکار قیصر نظامانی،  پاکستان سنی تحریک کے علی نواب  اور ایم کیو ایم کی جانب سے صادق افتخار کو میدان میں اتارا گیا ہے۔ اسی نشست کیلئے پی ایس پی کی جانب سے بھی ڈپٹی مئیرکراچی ارشد وہرہ کو کھڑا کیا گیا ہے۔

صوبائی اسمبلی سندھ کی نشست پی ایس 111 کیلئے 15 امیدوار میدان میں اترے ہیں۔ پی ٹی آئی کے شہزاد قریشی، پیپلزپارٹی کے فیاض پیرزادہ اورایم کیوایم کے جہانزیب مغل میں مقابلہ ہوا۔

کراچی کے دونوں حلقوں میں سات لاکھ بائیس ہزار سے زائد ووٹرز رجسٹرڈ   ہیں، جب کہ ضمنی انتخاب کیلئے 320 پولنگ اسٹیشنز قائم کیے گئے ہیں۔ پولنگ کا آغاز اتوار کی صبح 8 بجے ہواہے اور پولنگ شام 5 بجے تک بلا تعطل جاری رہی  ۔

PTI

Peshawar By elections

NA247

karachi By Elections

Tabool ads will show in this div