دانش کنیریا پہلے غلطی تسلیم کرلیتے تو فائدہ ہوسکتا تھا،پی سی بی

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/10/DANISH-CONFESSION-1700-PKG-18-10-Mukkaram.mp4"][/video]

پی سی بی کے قانونی مشیر تفضل رضوی نے کہا ہے کہ دانش کنیریا پہلے ہی غلطی تسلیم کر لیتے تو فائدہ ہوسکتا تھا۔

تفضل رضوی نے کہا ہے کہ دانش کنیریا کو 6 سال پہلے غلطی تسلیم کرنے کیلئے کہا تھا، ٹھوس شواہد کی موجودگی میں وہ کیس نہیں جیت سکتے تھے مگر  انہوں نے پی سی بی کی بات ماننے سے انکار کردیا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے قانونی مشیر کا مزید کہنا ہے کہ غلطی تسلیم کرنے کے بعد دانش کنیریا کو پوری قوم اور پی سی بی سے معافی مانگنی چاہئے۔

واضح رہے کہ تاحیات پابندی کا سامنا کرنے والے دانش کنیریا نے عرب ٹی وی کو انٹرویو میں بتایا ہے کہ  بُکي انو بھٹ سے ان کی ملاقات 2005ء کے دورۂ ویسٹ انڈیز میں اسسٹنٹ منیجر نے کرائی۔

دانش کنيريا نے 6 سال بعد جرم کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ انگلش کرکٹ بورڈ کے الزامات کو قبول کرتا ہوں، اپنے فینز اور انگلش کاؤنٹی کے ساتھیوں سے معذرت چاہتا ہوں، جان بوجھ کر میرون ویسٹ فیلڈ کو بکي سے ملوایا، حکام کو معاملے سے آگاہ نہ کرنے پر پچھتاوا ہے۔

Tabool ads will show in this div