پاکستان میں 3 ہزار سے زائد کمسن بچوں سے زیادتی کا انکشاف

پاکستان میں گذشتہ برس ساڑھے 3 ہزار کم سن بچوں کے ساتھ زیادتی کے واقعات پیش آئے۔ وزارت انسانی حقوق نے سینیٹ کی خصوصی کمیٹی کو تفصیلات سے آگاہ کردیا۔

نزہت صادق کی زیر صدارت سینیٹ کی خصوصی کمیٹی کے اجلاس میں وزارت انسانی حقوق نے کم سن بچوں کے ساتھ زیادتیوں پر بریفنگ دی۔

اجلاس میں انکشاف کیا گیا کہ 2017ء میں کم سن بچوں سے زیادتی کے 3 ہزار 445 واقعات رونما ہوئے۔

رجسڑڈ کیسز کے مطابق زیادتی کا نشانہ بننے والوں میں 2 ہزار 77 بچیاں اور 1 ہزار 368 بچے شامل ہیں۔

وزارت انسانی حقوق کا کہنا ہے زیادتی کے 60 فیصد واقعات کم سن بچیوں کے ساتھ پیش آئے۔

کمیٹی ارکان نے کہا بچوں کے ساتھ زیادتی کے بڑھتے ہوئے واقعات روکنے کیلئے اداروں کو فعال کردار ادا کرنا ہوگا۔

اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے سینیٹر شیری رحمان اور بیرسٹر سیف نے زینب کے قاتل کو سرعام سزا دینے کی مخالفت کردی۔ ان کا کہنا تھا ایک بار سرعام سزا دینے کا سلسلہ شروع ہوگیا تو ہر معاملے کیلئے یہی مطالبہ کیا جائے گا۔

SENATE

rape cases

Human rights ministry

Tabool ads will show in this div