بجلی کی قیمت کیوں نہیں بڑھائی، فواد چوہدری ن لیگ پر برس پڑے

مسلم لیگ ن کی ساکھ نہیں تھی، اس لیے انہوں نے بجلی کی قیمت نہیں بڑھائی

گیس کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ کے بعد تحریک انصاف کی حکومت نے عوام پر بجلی کا بم گرانے کی پوری تیار کرلی ہے۔ وفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ بجلی کی قیمت میں اضافہ کا حتمی فیصلہ اب تک نہیں ہوا تاہم اس پر غور کر رہے ہیں اور جلد ہی اس بارے میں حتمی فیصلہ کیا جائے گا اور گیس کی طرح بجلی کا بوجھ بھی غریب کے بجائے امیروں پر ڈالا جائے گا۔

فواد چوہدری نے مسلم لیگ ن کو بجلی کی قیمتیں نہ بڑھانے پر تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ حکومت کو بھاری سبسڈی دینا پڑتی ہے۔ بجلی کی فی یونٹ لاگت 15 روپے 53 پیسے ہے جو حکومت کو 14 روپے 22 پیسے میں مل رہی ہے جبکہ عوام کو عوام کو 11 روپے71 پیسے میں دی جارہی ہے جس کے باعث حکومت کو ہر یونٹ کے اوپر 2 روپے 63 پیسے نقصان ہورہا ہے۔

 

یہ بھی پڑھیں: بجلی صارفین پر 4 ماہ میں 45 ارب روپے کا اضافی بوجھ

 

وزیراطلاعات نے بجلی کی قیمتوں میں اضافے کا راستہ ہموار کرتے ہوئے کہا کہ مسلم لیگ ن کی حکومت کی سیاسی ساکھ نہیں تھی، اس لیے انہوں نے بجلی کی قیمت نہیں بڑھائی۔ لیکن ہم سیاسی طور پر مضبوط ہیں اور سخت فیصلے کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ شہباز شریف نے سستے پلانٹس لگانے کے دعوے کیے تھے مگر قائد اعظم سولر پلانٹ کی فی یونٹ بجلی 16 روپے سے زائد میں بنتی ہے جو دنیا کا سب سے مہنگا ترین پلانٹ ہے۔ اس لیے حکومت نے تمام سولر پلانٹس کے آڈٹ کا فیصلہ کیا ہے۔ بدعنوانی میں ملوث افراد کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

توانائی

Fawad chohdry

Tabool ads will show in this div