آئی ایم ایف کا قرضہ سی پیک کی ادائیگی پر خرچ نہیں ہوگا، وزیر خزانہ

وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف کا قرضہ چین پاکستان اقتصادی راہداری (سی پیک) کی ادائیگی پر خرچ نہیں ہوگا۔


اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو میں وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا کہ سی پیک کے قرضوں کی تفصیلات دینے میں ہمیں کوئی حرج نہیں لیکن قرض کی واپسی کو چین کے قرضے سے جوڑنے کا الزام درست نہیں۔ انہوں نے کہا کہ 9 ارب ڈالر قرضوں کی واپسی میں چین کا قرضہ 30 کروڑ بھی نہیں۔

آئی ایم ایف سے قرض لینے سے متعلق اپوزیشن جماعتیں تحریک انصاف کی حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنا رہی ہیں۔

اسد عمر نے کہا کہ سی پیک قرضوں سے متعلق امریکا کا تاثر بالکل غلط ہے کیونکہ سی پیک قرضوں کے باعث ہم آئی ایم ایف کے پاس نہیں گئے۔ انہوں نے کہا کہ بیل آؤٹ پیکج معیشت کے لیے ناگریز ہے، یہ بیل آؤٹ پیکیج آئی ایم ایف سے ملے یا چین سے ہمیں اس کی ضرورت ہے۔

اسد عمر نے کہا کہ پاکستان اٹھارہ مرتبہ آئی ایم ایف سے معاہدہ کرچکا ہے اور خواہش ہے کہ یہ آئی ایم ایف پروگرام آخری ہو۔ انہوں نے کہا آئی ایم ایف کی شرائط  نہ ماننے والی ہوئیں تو نظرثانی کرسکتے ہیں، ابھی نہ شرائط ہیں نہ ایسی صورتحال۔

اسد عمر نے کہا کہ جب ن لیگ کی حکومت ختم ہوئی تو زر مبادلہ کے ذخائر 18 ارب تھے اور اب گر کر 8 ارب ڈالر تک آ گے، ہر ماہ دو ارب ڈالر سے زائد ذخائر گر رہے ہیں جبکہ تجارتی خسارے میں کچھ کمی ہے۔

اسد عمر نے کہا کہ گزشتہ حکومت کیلئے عالمی ماحول ساز گار تھا، اب عالمی حالات مختلف ہیں۔ میرے آئی ایم ایف کے پاس جانے کے اعلان سے اسٹاک مارکیٹ نہیں گری بلکہ اس دن اسٹاک مارکیٹ چھ سو پوائنٹ گری۔

اسد عمر نے کہا کہ ہر مہینے کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ دو ارب ڈالر بڑھ رہا ہے، جب تک برآمدات نہیں بڑھیں گی تجارتی خسارہ کم نہیں ہوگا۔ انہوں نے کہا ملک میں دو ماہ کی درآمد کے ذخائر بھی نہیں، تیل کی بڑھتی قیمتیں درآمدات بڑھنے کا سبب ہیں۔

ملک میں ہونے والی تنقید سے متعلق وزیر خزانہ نے کہا کہ ہمارے آئی ایم ایف کے پاس جانے پر ردعمل زیادہ آیا، ایسا لگا رہا ہے جیسے کوئی انوکھا کام کر دیا، درحقیقت ہمیں بدتر معاشی صورتحال کے باعث آئی ایم ایف کے پاس جانا پڑا۔

ایران پر پابندیوں سے متعلق سوال پر اسد عمر نے کہا کہ پابندیوں کی وجہ سے تيل کي قيمتيں بڑھيں گي اور تيل کی قیمتیں بڑھنے سے پاکستان کو مزید نقصان ہوگا۔

ایک سوال پر اسد عمر نے کہا کہ میرا کوئي کلپ ڈھونڈ کر دکھائيں جس ميں کہا ہو کہ آئي ايم ايف کے پاس نہيں جاوں گا؟۔

finance minister

IMF loan

iran oil

Tabool ads will show in this div