نکاح نامے مانگنے والے پولیس اہلکاروں کیخلاف سخت کارروائی کا حکم

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/10/Police-Chief-on-Marreid-2100-Khi-Pkg-10-10.mp4"][/video]

مياں بيوی ہونے کا ثبوت ديں ورنہ جانے نہيں ديا جائے گا، کراچی پوليس کا يہ رويہ اب برداشت نہيں ہوگا، پولیس چیف امیر شیخ نے نکاح نامہ مانگنے والے پولیس اہلکاروں کیخلاف سخت کارروائی کا حکم دے دیا۔

کراچی پولیس چیف امیر شیخ نے اہلکاروں کو ہدایت کی ہے کہ تفریحی مقامات ساحل سمندر، کلفٹن کی شاہراہ، ڈيفنس یا شہر کے کسی بھی علاقے میں گھومنے والے شہریوں سے مياں بيوی ہونے کا ثبوت نہيں مانگا جائے گا، جو پوليس اہلکار نکاح نامہ مانگے گا، وہ کارروائی کی زد ميں آئے گا۔

ایک شہری کا کہنا ہے کہ پولیس اہلکار نے مجھ سے پہلے نکاح نامہ مانگا پھر 500 روپے لے کر چھوڑا، جگہ جگہ تنگ کیا جاتا ہے۔

امیر شیخ نے تينوں زونز کے ڈی آئی جيز کو خط ميں يہ بھی لکھا ہے کہ شکايات ملی ہیں کہ پوليس اہلکار نکاح نامہ طلب کرکے شہریوں کو خوفزدہ کرتے ہيں، کراچی پولیس چیف نے اہلکاروں کی شکایت کرنے کیلئے موبائل فون نمبر پر جاری کردیا۔

CCPO

Nikah nama

Tabool ads will show in this div